مزید 2 ٹی وی چینلز بند ہونے جارہے ہیں اور بڑے پیمانے پر ملازمین کے بیروزگار ہونے کا خدشہ

میڈیا انڈسٹری کو پہلے ہی مشکلات کا سامنا تھا اوپر سے کرونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والی صورتحال اور لاک ڈاؤن نے کاروباری سرگرمیوں کو ٹھپ کر دیا ۔ٹی وی چینلز کا ریونیو اور آمدن رک گئی مختلف میڈیا ہاؤسز میں تنخواہوں کی ادائیگی اور واجبات کی عدم ادائیگی کے مسائل درپیش ہیں اب اطلاعات گردش کر رہی ہیں کہ مزید 2 ٹی وی چینلز بند ہونے جارہے ہیں اور بڑے پیمانے پر ملازمین کے بیروزگار ہونے کا خدشہ ہے سوشل میڈیا پر ایک وی لا گ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایسے 2 ٹی وی چینلز جن کے مالکان کی یونیورسٹیاں اور کالجز ہیں ان کی آمدن بری طرح متاثر ہوئی ہے اور وہاں پر اخراجات میں فوری طور پر کمی لانے پر غور کیا جا رہا ہے اور ان کے قریبی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ صورتحال بہتر نہ ہونے کی صورت میں دو ٹی وی چینل بند ہونے جا رہے ہیں جہاں پر بڑی تعداد میں ملازمین کے بیروزگار ہونے کا خدشہ پیدا ہوچکا ہے ۔یاد رہے کہ پہلے ہی اس صورتحال کی وجہ سے افسر میڈیا ہاؤسز میں صحافیوں اور ملازمین کو تنخواہیں ادا نہیں کی جا سکی ہیں اور اکثر جگہوں پر تنخواہ تاخیر کا شکار ہے یا آدھی تنخواہ دے کر گزارا کیا جا رہا ہے ۔

حال ہی میں ملک ریاض نے اپنا ٹی وی چینل آپ ٹی وی بند کر دیا وہاں پر بھی بڑے پیمانے پر بے روزگاری پھیلی۔ اگرچہ ملک ریاض کی جانب سے ملازمین کو تنخواہ اور مالی مدد کرنے کی یقین دہانی کرائی جاچکی ہے لیکن وہاں پر بھی شکایات سامنے آرہی ہیں لوگوں کا کافی پیسہ پھنسا ہوا ہے اور واجبات کی ادائیگی ایک مسئلہ بن چکا ہے ۔
آپ ٹی وی کو شروع کرنے میں آفتاب اقبال کا ہاتھ تھا لوگ یہی سمجھتے رہے کہ اصل مالک آفتاب اقبال ہیں بعد میں لوگوں کو یہ حقیقت بتا چلی کہ وہ تو 10 فیصد سے زیادہ کی شیئر ہولڈر نہیں ہیں بعد میں افتاب اقبال اپنے ہی ٹی وی چینل کو چھوڑ کر دوسری جگہ چلے گئے لیکن بہت سے آرٹسٹوں اور ملازمین کے پیسے پھنس گئے مارکیٹ سے بھی بہت سی چیزیں خریدی گئی ہیں اور ان کے پیسے بھی رکے ہوئے ہیں ۔

آفتاب اقبال کے مختلف ٹی وی چینلز پر ہونے والے پروگراموں میں محمد رفیع کے گانے گانے والے سنگر خالد بیگ بھی سامنے آگئے ہیں اور انہوں نے بھی بتایا ہے کہ آفتاب اقبال کی طرف ان کے لاکھوں روپے نکلتے ہیں سوشل میڈیا پر دادا ہٹلر کے نام سے پروگرام کرنے والے آفتاب آقبال کے پروگرام کے ایک سابق آرٹسٹ کے سوالات پر سنگر خالد بیگ نے بتایا کہ ان کا معاہدہ ہمیشہ آفتاب اقبال کے ساتھ رہا کبھی بھی کسی ٹی وی انتظامیہ کے کاغذی معاہدے پر دستخط نہیں کیے آفتاب اقبال اور ان کے پروڈیوسر ہیں انہیں اپنے ساتھ پروگرام میں لے کر جاتے تھے اور جو رقم طے کی جاتی تھی پھر وہ مکمل طور پر ادا نہیں کی گئی ایکسپریس ٹی وی کے زمانے کے 14 لاکھ روپے ابھی تک پھنسے ہوئے ہیں بعد میں مجھے جو چیک دیئے گئے وہ بھی کم اماؤنٹ کے دیے گئے پھر آپ ٹی وی پر میرے ساتھ انھوں نے پروگرام کیے اور وہاں بھی چھ لاکھ روپے پسے ہوئے ہیں سنگر خالد بیگ کے مطابق ان کے ایک دوست کے بھائی کے بھی 14لاکھ روپے آپ ٹی وی پر پھنسے ہوئے ہیں دادا ہٹلر کے سوالات پر خالد بیگ کا کہنا تھا کہ آپ ٹیوی میں خرابی پیدا نہ ہوتی اگر افتاب اقبال اپنے چھوٹے بھائی کو ایم ڈی نہ بناتے ان کے چھوٹے بھائی جنید اقبال فارغ آدمی تھے ان کے پاس کوئی کام نہیں تھا ان کو ایم ڈی بنا دیا میں نے ایک دفعہ آفتاب اقبال سے اعتراض بھی کیا کہ میری تعلیم ان سے زیادہ ہے ایم اے میوزک کررکھا ہے مجھے 24 گھنٹے کے ٹی وی چینل میں کوئی بہتر پروگرام دے دیں۔


ہٹلر دادا کے سوال پر خالد بیگ نے بتایا کہ آفتاب اقبال ناظرین کو ایسا تاثر دیتے ہیں جیسے انہیں موسیقی کے بارے میں بہت کچھ بتا ہے حالانکہ کئی مرتبہ خراب سر لگنے کے باوجود وہ تعریف کرتے رہتے تھے اور موسیقی کو سمجھنے والے لوگ ان کا منہ تکتے رہ جاتے ۔ خالد بیگ نے کہا کہ ہاں یہ بات میں بھی جانتا ہوں اور ایک بات میں بھی بتانا چاہتا ہوں کہ آفتاب اقبال میں تکبر ہے غرور بہت ہے ان کے ہاں جی بالکل نہیں ہے وہ دوسروں کو کمتر سمجھنے کی بیماری میں مبتلا ہیں ۔

دوسری طرف آفتاب اقبال کے بھائی جنید اقبال کا ایک انٹرویو بھی سامنے آیا ہے اور انٹرویو کرنے والے وفاس عزیز کا کہنا ہے کہ آپ ٹی وی کا بنیادی طور پر چینل لائسنس غظنفر صاحب کے نام پر تھا آپ ٹی وی میں کافی مسائل پیدا ہوئے نجم سیٹھی 60 لاکھ روپے تنہا لے رہے تھے عمران میر ڈائریکٹر نیوز کے مسائل الگ تھے رؤف کلاسرا کا پروگرام بجٹ نہ ہونے کی وجہ سے بند کیا گیا ۔وقاص عزیز کو انٹرویو دیتے ہوئے افراد اقبال کے بھائی اور سابق ایم ڈی اپ ٹی وی جنید اقبال نے کہا کہ ہمارے حوالے سے اتنا کچھ کہا گیا اور جو باتیں ہو رہی ہیں اس پر مجھے خوشگوار حیرت بھی ہوئی کہ اتنے بڑے بڑے لوگوں کے ساتھ ہمارا نام بھی آگیا اور کرو نہ سے توجہ ہٹ کر لوگوں کا دھیان آپ ٹی وی کے معاملات پر آگیا میں بتانا چاہتا ہوں کہ ملک ریاض کو خود یہ ٹی وی چینل خریدنے کا نہ کوئی شوق تھا نہ کوئی ضرورت تھی ان سے درخواست کی گئی تھی کہ ٹیک اور کر لیں سنبھال لیں آپ اتنے بڑے ٹی وی چینل کو چلا سکتے ہیں ان کے آڈیٹرز آئے انہیں بھی دو مہینے لگ گئے حیران پریشان تھے کہ کس طرح آپ ٹی وی کے معاملہ چل رہے ہیں اس کے مالی معاملات واقعی پیچیدہ تھے۔ یہاں کس کی کتنی انویسٹمنٹ ہے اور کون کیا کرتا رہا ہے میں رؤف کلاسرا اینڈ کمپنی کی طرف اشارہ کر رہا ہوں راؤف کلاسرا کو یہ بہت زیادہ ریٹنگ دینے والے آدمی نہیں ہیں لیکن ان کا ایک اپنا پرسیپشن ضرور ہے اور وہاں پر انویسٹیگیشن کرکے پروگرام کرتے ہیں ۔جنید اقبال کا کہنا ہے کہ مارکیٹ میں کہا جارہا ہے کہ تین چار ارب روپے کا ٹیکہ لگا دیا گیا اس طرح کی باتیں ہو رہی ہیں یہ بھی کہا گیا کہ سو سے زیادہ رشتہ دار کو اپنے بھرتی کر رکھے تھے یہ سب جھوٹ ہے بے بنیاد ہے لوگوں کو اصل حقائق پتا نہیں ہیں ہمارا آڈٹ ہوا تھا باہر کی کمپنی نے فرانزک آڈٹ کیا تھا ۔ایک زمانے میں مجھے اندازہ ہو رہا تھا کہ آنے والے دنوں میں مالی بحران ہوجائےگا تنخواہ بھی نہیں دے سکیں گے میں نے آفتاب اقبال کو صورت حال بتا دی تھی اور اپنا استعفیٰ بھی دے دیا تھا لیکن انہوں نے منع کیا میں دو بنیادی طور پر بینکر ہوں۔ بین کر فوری طور پر مالی صورتحال کو سمجھ لیتا ہے میں نے 22 جولائی 2019 کو استعفی دے دیا تھا لیکن پھر بھی دو اگست کو وہاں کام کرنے کی رضامندی ظاہر کی تھی لیکن یہ بھی کہہ دیا تھا کہ اگر کوئی سمجھے کہ میں نے کام میں مداخلت کر رہا ہوں تو پھر میں آفس نہیں آتا ۔یہ حقیقت ہے کہ آپ ٹی وی میں فنانشل اصولوں کے مطابق ایس او پی فالو نہیں ہورہی تھی اور ڈیٹ کی کمپلائنس نہیں ہوئی تھی کافی غلطیاں تھیں لیکن یہ بالکل کہنا غلط ہے کہ اتنا بڑا ٹیکا لگا دیا گیا یا سو رشتہ دار بھرتی کر لیے ۔اصل میں ہوا یہ کہ ہمارے پاس ڈھائی چینل تھے آپ ٹی وی انڈس ٹی وی اور سوشل میڈیا ۔کل ملا کر 900 کا اسٹاف ہوچکا تھا 900 لوگوں کے اسٹاف میں اگر سی ای او نے آٹھ یا نو لوگ اپنے لئے تو کون سی قیامت آ گئی وہ بھی میرٹ پر رکھے گئے تھے یہ دونوں نے اپنی بیٹی کو رکھا جو بہترین یونیورسٹی سے میڈیا پر کرائی تھی چینل کے اندر کی بیٹی اگر کام کر رہی ہے تو اس کو صرف ایک لاکھ روپے سیلری پر رکھا گیا نیچے دیگر نو لوگوں میں ایک میں بھی تھا ان لوگوں کو اس لیے رکھا تھا کہ یہ اعتماد کے لوگ تھے صاف ستھرے لوگ تھے اور سیکیورٹی وغیرہ کی ڈیوٹیاں کر رہے تھے چالیس ہزار روپے کون سی بڑی سیلری ہے کسی کو ہم نے چھ لاکھ جانور لاک روپے پر نہیں رکھا یہ سب جھوٹ ہے اور لوگ کہتے ہیں کہ کروڑوں روپے آتے تھے جنوری 18 سے یہ سب کام شروع ہوا دس کروڑ روپے سے زیادہ کبھی نہیں ملے تین چار کروڑ ملتے تھے اور 2018 کے الیکشن میں تو کوئی پیسہ نہیں ملا ان دنوں میں کنسٹرکشن اور رینوویشن ہو رہی تھی ۔یہ الزام بھی غلط ہے کہ 16 کروڑ روپے رینٹ میں دے رہے تھے ۔دونوں چینل کا سارا خرچہ بارہ سے تیرہ کروڑ روپے مہینہ تھا ان پیسوں میں تھوڑے تھوڑے بچا کر ہم اپنی چیزیں بھی خرید رہے تھے دو مہنگے ویڈیو آڈیو ریکارڈنگ خریدے گئے وہ چینل کی اپنی ملکیت ہیں بیس کروڑ روپے مالیت کے 650 کے وی کے دو جنریٹر خریدے گئے 95 لاکھ روپے کا آنلائن الیکٹرونک سسٹم خریدا گیا بے شمار مشینری گرافک مشین 9لاکھ روپے کی منگوائی گئی ۔چالیس کیمرے ہمارے اپنے ہیں نیوز روم اور پروگراموں کے لیے مزید کمرے اور سامان آرہا تھا بہت سامان امپورٹ کیا ساڑھے چار کروڑ کا سامان امپورٹڈ سامان ہے سارا ریکارڈ موجود ہے

۔