پاکستانی سیاستدان اور ان کی باصلاحیت بیٹیاں

عام طور پر جب بھی پاکستانی سیاستدانوں کا ذکر کیا جائے تو دماغ کے بند دریچوں تک تعصبات، بدعنوانی جیسے احساسات رونما ہوجاتے ہیں لیکن آج ان تمام تر تعصب اور منفی جذبات کو نظر انداز کرکے ان کی زندگی کے ایک روشن پہلو پر نظر دوڑاتے ہیں جو ان کے ساتھ ساتھ ملک و قوم کے لیے بھی باعث فخر ہے۔

سیاستدان اپنی سیاسی سرگرمیوں میں جو بھی کرتے ہیں انہیں نظر انداز کر کے آج ان کی گھریلو زندگی پر ایک نظر ڈالتے ہیں۔ ذیل میں پاکستان کے7 معروف سیاستدانوں کی ان کی بیٹیوں کے ہمراہ تصاویر سمیت کچھ اہم معلومات شیئر کی جارہی ہیں۔

عندلیب عباس

عندلیب عباس بر سر اقتدار جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی سرگرم کارکن ہیں ،عندلیب رکن قومی اسمبلی بھی ہیں، کچھ لوگ ہی اس بارے میں جانتے ہوں گے کہ معروف اسپورٹس اینکر زینب عباس ان کی بیٹی ہیں۔

زینب عباس کھیلوں اور بالخصوص کرکٹ ٹورنامنٹ کو کوور کرتی ہیں انہوں نے مختصر عرصے میں اپنی صلاحیتوں کی بنیاد پر بین الاقوامی میڈیا تک رسائی حاصل کی اور ورلڈ کپ میں بھی ذمہ داریاں انجام دیں

پی ایس ایل کی رپورٹنگ سے شہرت کی بلندیوں تک پہنچنے والی زینب گزشتہ سال نومبر میں نامور کرکٹر عبدالحفیظ کاردر کے صاحبزادے حمزہ کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئیں۔

برطانوی یونیورسٹی ’وارویک ‘ سے مارکیٹنگ اور اسٹریٹجی میں ماسٹرزکی ڈگری حاصل کرنے والی زینب اپنے بارے میں کہتی ہیں کہ اسپورٹس میں میرا صحافتی سفرمحض’ اتفاقیہ‘ ہے،کچھ برس قبل کرکٹ کے تئیں میرے جنون نے ورلڈ کپ پینل شوکے لیےمجھے آڈیشن ٹیسٹ میں لا کھڑا کردیا


انہوں نے بتایا کہ نشریات میں کوئی تجربہ نہ ہونے کے باوجود بھی کرکٹ کے بارے میں میری جومعلومات تھیںاسی کے سبب مجھے ٹی وی میں پہلی ملازمت مل گئی، پھرکھیلوں کی نشریات کا جادو مجھ پر کچھ ایسا سرچڑھ کر بولا کہ اس کے بعد سے میرے لئے اس سے پیچھے ہٹنے کا کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوا

یوسف رضا گیلانی

سابق وزیر اعظم پاکستان اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے سرگرم کارکن یوسف رضا گیلانی کی بیٹی فضا گیلانی بطور ایونٹ پلینر اپنا بزنس چلا رہی ہیں۔

فضا گیلانی دوسرے سیاستدانوں کے بچوں کی طرح شہرت حاصل نہیں کرسکیں کیونکہ فضا اپنے پیشہ ورانہ کیریئر میں کم و بیش ہی دکھائی دیتی ہیں۔ فضا والد سے اظہار محبت کرتے ہوئے اکثر سوشل میڈیا پوسٹ شیئر کرتی نظر آتی ہیں

شیریں مزاری


وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کی بیٹی ایمان مزاری نے قانون کی ڈگری حاصل کی، ایمان اپنی ذہانت نہیں بلکہ اپنے تند و تیز لہجے کی وجہ سے مشہور ہیں جس کا منہ بولتا ثبوت ان کا ٹوئٹر اکاؤنٹ ہے ۔

جہانگیر ترین

وزیر اعظم عمران خان کے قریبی ساتھیوں میں سے ایک جہانگیر ترین بھی ہیں ۔ جہانگیر ترین اور ان کی بیٹی سحر ترین کا تعلق بالکل الگ شعبوں سے ہے۔ جہانگیر ترین ایک معروف و مقبول سابق سیاستدان جبکہ سحر نے ایک فیشن ڈیزائنر کے طور پر اپنا نام بنایا۔

سحر ترین ’ایس اسٹوڈیوز‘ کی بانی اور ڈائریکٹر ہیں، پاکستان کا پہلا میوزیم آرٹ ’کومو‘ بھی انہی کی ایک کاوش ہے۔سحر ترین اپنے کام کے ذریعے پاکستان کے فن و ثقافت کو فروغ دینے کی کوشش کرتی ہیں۔

نواز شریف

سابق وزیر اعظم پاکستان نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کو کون نہیں جانتا، اپنے والد کا دایاں ہاتھ مانی جانے والی مریم نواز نے کسی بھی مشکل میں والد کا ساتھ نہیں چھوڑا اور عوام کو متحد رکھنے کے لیے اپنی ہر ممکن کوشش کی۔

بینظیر بھٹو


سابق وزیر اعظم پاکستان بینظیر بھٹو کے قتل کو 12 سال گزر چکے ہیں بلاشبہ وہ پاکستان کی تاریخ کی مقبول ترین خواتین میں سے ایک تھیں۔

بینظیر کے گزر جانے کے بعد ان کی بیٹیاں آصفہ اور بختاور والدہ کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ملک کی خدمت کر رہی ہیں۔

آصفہ اور بختاور بھٹو دونوں سیاسی مباحثوں اور پیپلز پارٹی کے جلسوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتی ہیں اور ہمیں یاد دلاتی ہیں کہ وہ واقعی بے نظیر کی بیٹیاں ہیں۔

جگنو محسن:


سیدہ میمنت محسن یا جگنو محسن ایک مشہور سیاستدان اور صحافی ہیں۔ ان کا کنبہ باصلاحیت دانشوروں سے بھرا ہوا ہے۔ ان کے شوہر نجم سیٹھی ایک صحافی ہیں اور ان کا بیٹا علی سیٹھی ایک مشہور گلوکارہ ہے۔

جگنو محسن کی بیٹی میرا سیٹھی ایک نامور مصنفہ، اداکارہ اور ماڈل ہیں۔ یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ پورا کنبہ اپنے اپنے فن میں ماہر ہے
jang-report