کورونا وائرس: برطانیہ کی بنگلہ دیش میں پھنسے شہریوں کیلئے ریسکیو پروازیں

بنگلہ دیش میں پھنسے برطانوی شہری اس ہفتہ چار ریسکیو پروازوں کے ذریعے وطن واپس آ سکیں گے۔ فارن آفس نے تصدیق کی ہے کہ کورونا وائرس بحران کے پس منظر میں وہاں پھنسے برطانویوں کو لانے کیلئے یہ پہلا انتظام ہے۔ بتایا گیا ہے کہ ڈھاکہ سے لندن کیلئے یہ پروازیں منگل، جمعرات، ہفتہ اور اگلی اتوار کو روانہ ہوں گی۔ مجموعی طور پر 850 سیٹیں دستیاب ہیں، جس کیلئے 600 پونڈز فی کس کرایہ ہوگا۔ وزیر خارجہ دومینک راب نے کہا ہے کہ حکام بیرون ملک محصور برطانویوں کو وطن واپس لانے کیلئے 24 گھنٹے کام کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ جان ہاپکنز یونیورسٹی کے اعدادوشمار کے مطابق اب تک بنگلہ دیش میں کورونا وائرس کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 2000 سے زیادہ ہو چکی ہے جبکہ 84 اموات ہوئی ہیں۔ ملک میں پناہ گزین کیمپوں اور ایڈ ورکرز کی نقل وحرکت پر کچھ پابندیاں عائد ہیں۔ بنگلہ دیش میں برطانوی ہائی کمشنر رابرٹ چیٹرٹن ڈکسن نے کہا ہے کہ شمال مشرقی شہر سلہٹ سے برطانوی شہریوں کو لانے کیلئے بھی انظامات کئے گئے ہیں۔ سلہٹ سے دارالحکومت ڈھاکہ تک مقامی پرواز کے اخراجات چارٹرڈ پروازوں کے کرایوں میں شامل ہوں گے۔ بنگلہ دیش میں برطانوی سیاح مختص ویب سائٹ کے ذریعے اپنی نشست بک کرا سکیں گے۔ فارن آفس نے 20 سے 27 اپریل کے دوران انڈیا سے برطانوی شہریوں کو لانے کیلئے واپسی کی 17 پروازوں جبکہ پاکستان سے 21 اور 27 اپریل کے دوران 10 چارٹرڈ پروازوں کا انتظام بھی کیا ہے۔ فارن آفس نے تخمینہ لگایا ہے کہ مارچ میں کورونا وائرس کی وبا پھوٹ پڑنے کے وقت 300000 سے ایک ملین تک برطانوی بیرون ملک کے سفر پر تھے۔

Courtesy Jang Urdu