اسکینڈل،پولٹری سیکٹر کو 10لاکھ ٹن گندم پر سبسڈی دینے کا انکشاف

فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے ڈائریکٹر جنرل کی سربراہی میں گندم اسکینڈل سے متعلق انکوائری کمیٹی نے اپنی اضافی تحقیقات میں انکشاف کیا ہے کہ پولٹری ایسوسی ایشن کو گندم کی ایک بڑی مقدار مہیا کی گئی تھی،گندم کے بحران کی ضمنی رپورٹ سے متعلق انکوائری کمیٹی نے بھی بار بار این ایف ایس اینڈ آر وزیر صاحبزادہ محبوب سلطان کے پاکستان پولٹری ایسوسی ایشن (پی پی اے) کو سبسڈی والی گندم دینے کے بارے میں ’’بےنظیر فیصلہ‘‘ کے الفاظ استعمال کیے اور الزام لگایا کہ جس رفتار کے ساتھ پی پی اے کی درخواست پر این ایف ایس اینڈ آر کے ذریعہ عملدرآمد کیا گیا وہ اس لابی کے اثر و رسوخ کی نشاندہی کرتا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 19نومبر2018 کو پی پی اے نے پولٹری سیکٹر میں10لاکھ ٹن گندم مختص کرنے کی درخواست کرتے ہوئے این ایف ایس اینڈ آر وزیر سے رابطہ کیا۔درخواست میںکہا گیا کہ گزشتہ 2برسوں کے دوران پولٹری فیڈ یعنی مکئی میں استعمال ہونے والے ترجیحی اناج کی پیداوار ضروریات سے کم رہی۔پی پی اے نے این ایف ایس اینڈ آر سے درخواست کی کہ وہ 1،300/40کلوگرام کے اجرا کی شرح پر مطلوبہ مقدار مختص کرے۔
اسلام آباد (طارق بٹ)