پیزا ڈیلیوری بوائے سے سینکڑوں افراد کورونا کا شکار. . . . . . .بھارت میں پیزا ڈیلیور کرنے والے لڑکے میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جس کی وجہ سے سینکڑوں افراد کورونا کا شکار ہوگئے۔

پیزا ڈیلیوری بوائے سے سینکڑوں افراد کورونا کا شکار. . . . . . .بھارت میں پیزا ڈیلیور کرنے والے لڑکے میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جس کی وجہ سے سینکڑوں افراد کورونا کا شکار ہوگئے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق انڈیا کے دارالحکومت دہلی کے علاقے ملویاہ نگر میں ایک ریستوران کے ڈیلیوری بوائے میں کرونا کی علامات ظاہر ہونے کے 20 دن بعد کرونا کی تصدیق ہوئی جس کی وجہ سے 72 خاندانوں کے افراد کو قرنطینہ میں جانا پڑا۔

انڈیا ٹوڈے کی رپورٹ کے مطابق پیزا ڈیلیور کرنے والا لڑکا ملویاہ نگر کے علاقے ساویتری نگر کا رہائشی ہے اور متاثرہ شخص گزشتہ 20 دن سے آرڈر پہنچانے جارہا تھا جبکہ کچھ اسپتالوں میں بھی کھانا پہنچایا تھا۔

، متاثرہ شخص میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوتے ہی حکام نے ملویا نگر کے ہواز خاص علاقے میں 72 خاندانوں کی نشاندہی کی جنہیں وہ آرڈر پہنچانے گیا تھا جبکہ ان خاندانوں کے افراد کو اب قرنطینہ میں رکھا گیا ہےجن میں سے 10 افراد میں بھی کرونا کی تصدیق ہوگئی ہے۔

علاوہ ازیں حکام نے ان خاندانوں کے علاوہ پیزا ڈلیور کرنے والے ان 17 لڑکوں کو بھی قرنطینہ قرنطینہ منتقل کردیا جو اس کے ساتھ کام کر رہے تھے۔

پیزا کمپنی کا کہنا ہے کہ ریسٹورنٹ کی جانب سے کھانا پہنچانے والے عملے کو ماسک پہننے اور احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایت کی گئی تھی جبکہ متاثرہ شخص کے ساتھ کام کرنے والے دیگر عملے کے ارکان کا ٹیسٹ منفی آیا ہے لہزا اس واقعے کا ہم سے کوئی لینا دینا نہیں۔.