(آباد) کے چیئرمین محسن شیخانی نے وفاقی کابینہ کی جانب سے تعمیراتی شعبے کے لیے آرڈیننس کی منظوری کا خیر مقدم

ایسوسی ایشن آف بلڈرز اینڈ ڈیولپرز(آباد) کے چیئرمین محسن شیخانی نے وفاقی کابینہ کی جانب سے تعمیراتی شعبے کے لیے آرڈیننس کی منظوری کا خیر مقدم کرتے ہوئے اس آرڈیننس کو ملکی معیشت کی ترقی کے لیے تاریخ ساز اقدام قرار دیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان اور پوری وفاقی کابینہ کومبارکباددی ۔چیئرمین آباد تے کہا کہ تعمیراتی صنعت کو پوری دنیا میں معاشی ترقی میں ریڑھ کی ہڈی کی حاصل ہے۔ تعمیراتی شعبہ پاکستان میں زراعت کے بعد سب سے زیادہ روزگار فراہم کرتا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کو شروع سے ہی تعمیراتی صنعت کی اہمیت کا ادراک ہے، یہی وجہ ہے کہ انھوں نے تعمیراتی صنعت کے لیے تاریخ ساز پیکج کا اعلان کرکے ایک ویژنری لیڈر ہونے کا ثبوت دے دیا ہے۔ محسن شیخانی نے کہا کہ اپنا گھر خریدنے پر عوام سے ذرائع آمدن نہ پوچھنے ،فروخت کرنے پر کیپٹل گین ٹیکس کی چھوٹ اور بلڈرز اور ڈیولپرز سے تعمیراتی منصوبوں میں سرمایہ کاری پر ذرائع آمدن نہ پوچھنے سے تعمیراتی سرگرمیوں میں بہت اضافہ ہوگا جس سے نہ صرف ملکی معیشت کو ترقی ملے گی بلکہ لاکھوں افراد کو روز گار بھی ملے گا۔محسن شیخانی نے کہا کہ آرڈیننس سے کنسٹرکشن سیکٹر کو صنعت کا درجہ ملے گا،فکس ٹیکس اسکیم متعارف ہوگی،نیا پاکستان ہاﺅسنگ اسکیم میں سرمایہ کاری پر 90 فیصد ٹیکس کی چھوٹ ہوگی،گھر فروخت کرنے پر کیپٹل گین ٹیکس لاگو نہیں ہوگا اور کنسٹرکشن انڈسٹری ڈیولپمنٹ بورڈ کا قیام عمل میں لایا جائے گا جس سے تعمیراتی شعبے میں سرمایہ کاری کے لیے مقامی اور غیر ممالک کے بلڈرز اور ڈیولپرز کی حوصلہ افزائی ہوگی اور اس شعبے میں سرمایہ کاری میں انقلابی اضافہ ہوگا جس سے ملک کی گرتی ہوئی معیشت کو اوپر اٹھایا جاسکے گا ۔انھوں نے کہا کہ یہ سارے مطالبات آباد کئی دہائیوں سے کرتا آرہا ہے۔محسن شیخانی کا کہنا تھا کہ گذشتہ کئی دہائیوں سے پاکستان میں تعمیراتی شعبے کو نہ صرف نظر انداز کیا جاتا رہا ہے بلکی تعمیراتی شعبے کی ترقی میں روڑے بھی اٹکائے جاتے رہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ تعمیراتی شعبے کو ریلیف دینے کے لیے آرڈیننس سے کنسٹرکشن سیکٹر کے ساتھ کئی دہائیوں سے ہونے والی زیادتیوں کا ازالہ ہوگا ۔ چیئرمین آباد نے آئی ایم ایف کی جانب سے کورونا وائرس سے ہونے والے معاشی نقصان کے ازالے کے لیے پاکستان کو ایک ارب 38 کروڑ ڈالرز آسان قرضے کی منظوری اور جی 20 ممالک کی جانب سے 12 ارب ڈالر کے ریلیف پر وزیراعظم عمران خان کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان کے ایک ٹویٹ سے نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا کے 76 ترقی پزیر ممالک بھی مستفید ہوئے ہیں ۔وزیراعظم عمران خان کی قائدانہ صلاحیتوں کی پوری دنیا معترف ہوچکی ہے جس پر بلڈرز اور ڈیولپرز کو بھی فخر ہے۔ چیئرمیں آباد نے تمام شہریوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کی وبا سے بچاﺅ کے لیے وفاقی و صوبائی حکومتوں کی ہدایات پر مکمل عمل کرتے ہوئے اپنی اور اپنے خاندان کے افراد کی جانوں کو محفوظ بنانے کے لیے غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نہ نکلیں۔