بریگیڈیئر اسد منیر کا خودکشی سے پہلے کا نوٹ سامنے آگیا

ابھی یہ بحث چل رہی تھی کہ برگیڈیئر اسد منیر نے خود کشی کی ہے یا ان کا قتل کیا گیا ہے۔ اس دوران ان کا خود کشی سے پہلے ٹائپ کیا ہوا ہے بیان سامنے آگیا ہے جس میں انہوں نے نیب میں جاری انکوائری اور نیب کے تفتیشی افسر اور ان کے دیگر افسران کے رویے کے خلاف احتجاج ریکارڈ کراتے ہوئے اپنی زندگی ختم کرنے کا فیصلہ کیا اور چیف جسٹس کو اس صورتحال کا نوٹس لینے کی اپیل بھی کر گئے ۔انگریزی میں ٹائپ شدہ ان کا تحریری نوٹ سامنے آگیا ۔اس نوٹ کے آخر میں ان کے نام کے اوپر ان کے دستخط تو نہیں ہیں ۔لیکن دوسرے کے اس خودکشی کے نوٹ میں انہوں نے نیب میں جاری انکوائری کے حوالے سے تفصیلی خیالات کا اظہار کر دیا ہے ۔بعض لوگوں کا یہ کہنا بھی ہے کہ اس نوٹ کی بھی تحقیقات ہونی چاہیے کہ یہ اصلی ہے یا نہیں ۔اس معاملے کی تفتیش جوں جوں آگے بڑھے گی مزید انکشافات کی توقع کی جا رہی ہے ۔پیپلز پارٹی کے مشیر اطلاعات مرتضی وہاب نے اصل منیر کے حوالے سے بیان دیا ہے کہ یہ خون نیب کی گردن پر ہے

پولیس کے مطابق دفاعی تجزیہ نگار بریگیڈیئر ریٹائرڈ اسد منیر نے گلے میں پھندا ڈال کر خود کشی کی ۔ان کی موت سے ایک روز قبل نیب کے ایگزیکٹیو بورڈ نے ان کے خلاف مقدمے کی اجازت دی تھی وہ مشہور دفاعی تجزیہ نگار ہونے کے ساتھ ساتھ ماضی میں انٹیلی جنس ادارے کے پشاور میں سربراہ بھی رہے ۔ان کی اچانک موت پر سیاسی اور دفاعی حلقوں میں گہری تشویش کا اظہار کیا گیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں