صنعتکار آن لائن درخواستیں محکمہ صنعت کو ارسال کریں

۔ صوبائی وزیر برائے صنعت وتجارت اور امداد باہمی اور انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ حکومت سندھ کی اولین ترجیح انسانی جانوں کا تحفظ ہے۔ کورونا وائرس کے باعث معاشی ترقی کا پہیہ وقتی طور پر دھیما پڑ گیا ہے لیکن وقتی فائدے کے لئے انسانی جانوں کا خطرہ مول نہیں لیا جاسکتا۔ یہ بات آج انہوں نے چیف سیکرٹری سندھ کے دفتر میں صنعت کاروں کے ساتھ منعقد ہونے والے ایک اجلاس کے بعد ان سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ  وفاقی وزراء اور مشیروں کی فوج سندھ حکومت پر برسنے کے بجائے کورونا کے خلاف وفاقی حکومت کے جانب سے اقدامات اٹھانے میں تاخیر اور غفلت برتنے کے بارے میں عوام کو آگاہی دیں۔ جبکہ سندھ حکومت  اپنے لوگوں کے ساتھ کھڑی ہے اور وفاقی وزراء صرف اور صرف میڈیا میں اچھل رہے ہیں۔ انہوں نے مذید کہا کہ سندھ میں بھوک افلاس کا غلط اور من گھڑت تاثر دیا جا رہا ہے۔ سندھ کابینہ کے وزراء  ، اسمبلی اراکین، پارٹی زمہ داران نے سندھ کے ہر حلقہ میں مستحق لوگوں کی گھروں کی دہلیز تک راشن پہنچایا ہے اور پہنچا رہے ہیں۔ ہم خدمت پر یقین رکھتے ہیں۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ حکومت سندھ کو صنعت کاروں اور چھوٹے تاجروں کے مسائل کا اندازہ ہے ۔ ہم بھی صنعتیں کھولنا چاہتے ہیں تاکہ مزدور کے گھر کا چولہا ٹھنڈا نہ ہو اورصنعتکاروں کو سندھ حکومت کے تمام ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنانا ہوگا تاکہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکا جاسکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ صنعتکار آن لائن درخواستیں محکمہ صنعت کو ارسال کریں گے، انسپیکشن کے بعد ان صنعتیں کھولنے کی اجازت دے دی جائے گی۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ  مزدوروں کی حفاظت فیکٹریری مالکان کو یقینی بنانا ہوگی۔ کورونا وائرس کے خلاف سندھ حکومت نے سب  پہلے سے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں اور ہم اپنے تمام وسائل استعمال کرتے ہوئے اس کے خلاف اپنی جدوجہد جاری رکھیں۔ کورونا کے خلاف جنگ عوامی تعاون کے بغیر نہیں جیتی جاسکتی۔