صنعتکاروں کو حکومت کی جاری کردہ ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنانا ہوگا، انڈرٹیکنگ دینی ہوگی۔

صنعتکاروں کو حکومت کی جاری کردہ ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنانا ہوگا، انڈرٹیکنگ دینی ہوگی۔  چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ صنعتکار آن لائن درخواستیں محکمہ انڈسٹری کو بھیجے گے، انسپکشن کے بعد 24 گھنٹوں میں اجازت دی جائے گی۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت جام اکرام اللہ دھاریجو حکومت سندھ کی تمام ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنائے گے۔ صنعتکار کراچی 15 اپریل ۔چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ اور صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو سے صنعتکاروں کے وفد نے سندھ سیکریٹریٹ میں ملاقات کی, ملاقات میں ایڈیشنل چیف سیکریٹری داخلہ محمد عثمان چاچڑ، کمشنر کراچی افتخار شالوانی، ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن، سیکریٹری لیبر عبدالرشید سولنگی اور سیکریٹری انڈسٹریز شریک ہوئے جب کہ صنعتکاروں کے وفد میں زبیر موتی والا سمیت کراچی چیمبر آف کامرس، کورنگی انڈسٹریل ایریا، فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے نمائندوں نے شرکت کی۔ ملاقات میں صنعتکاروں نے لاک ڈاو ¿ن کے دوران پیش آنے والے مسائل سے حکومتِ سندھ کو آگاہ کیا۔ملاقات میں چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ نے کہا کہ وہ صنعتکاروں کے مسائل سے واقف ہیں، صنعتوں کو بند کرنے کا فیصلہ مشکل ضرور تھا مگر اس سے کرونا وائرس کو پھلنے سے روکا گیا ہے۔ انہوںنے کہا کہ اب جن صنعتوں کو کھولنے کی اجازت دی ہے ان کو ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنانا ہوگا۔ انہوںنے کہا کہ صنعتکاروں کو ایس او پیز کے حوالے سے انڈرٹیکنگ دینی ہوگی۔ ممتاز علی شاہ نے کہا کہ لاک ڈاو ¿ن کے وجہ سے کرونا وائرس کی روک تھام کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں۔ صنعتوں میں مزدوروں کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے گا۔ صنعتکار مزدوروں کی تمام تفصیلات فراہم کرنے کے پابند ہونگے۔ انہوںنے کہا کہ کرونا وائرس ایک نئی وبا ہے، جس کا اب تک علاج صرف احتیاط ہے، انہوںنے کہا کے صنعتوں میں بہت سے احتیاطی تدابیر پر عمل ضرور کیا جاتا ہے مگر کرونا وائرس کے ایس او پیز بلکل مختلف ہیں، ان ایس او پیز کو یقینی بنانے سے ہی ہم محفوظ رہ سکیں گے۔اجلاس میں صوبائی وزیر صنعت و تجارت جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ صنعتکار آن لائن درخواستیں محکمہ انڈسٹری کو بھیجے گے، انسپکشن کے بعد 24 گھنٹوں میں اجازت دی جائے گی۔ ملاقات میں صنعتکاروں نے لاک ڈاو ¿ن کی حمایت کی اور یقین دلایا کہ وہ حکومت سندھ کی تمام ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنائے گے۔ انہوںنے کہا کہ حکومت سندھ سخت اقدامات ضرور کر رہی ہے لیکن اس سے انسانی زندگیاں محفوظ ہوئی ہیں۔ صنعتکاروں نے کہا کہ اگلے مرحلے میں ہول سیل مارکیٹ کو بھی کچھ گھنٹوں کےلئے کھولنے کے بھی اقدامات کئے جائیں، انہوںنے کہا کہ حکومت سندھ جب چاہے ایس او پیز کے حوالے سے صنعتوں کی انسپکشن کرے۔ انہوںنے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ ڈومیسٹک ای کامرس کی بھی اجازت دی جائے۔ ہینڈ آﺅ ٹ نمبر341۔۔۔ایف آئی جے