ہمیشہ کی طرح اوؤرسیز پاکستانی بڑھ چڑھ کر وزیر اعظم کی اپیل پر کروناء وائرس کے معاملات کا مقابلہ کرنے کیلئے وزیر اعظم کی اپیل پر بھرساتھ دیا جائے گا

جدہ (امیر محمد خان )سعودی عرب میں اوؤرسیز پاکستانیون نے  وزیر اعظم عمران خان کی  اپیل پر لبیک  کہتے ہوئے امید ظاہر کی ہے  ہمیشہ کی طرح اوؤرسیز پاکستانی  بڑھ چڑھ کر  وزیر اعظم کی اپیل پر   کروناء وائرس کے معاملات  کا  مقابلہ کرنے کیلئے  وزیر اعظم کی اپیل پر بھرساتھ دیا جائے گا۔  نیز  سعودی  عرب میں  پاکستانی اسکولوں میں زیر تعلیم   جدہ، ریاض، طائف،دمام، جبیل اور  دیگر شہروں میں 40,000   سے زائد طلباء و طالبات   کے والدین  نے وزیر اعظم سے مطالبہ کیا ہے  سعودی عرب میں پاکستانی اسکولوں مین زیر تعلیم  بچوں کی فیسوں کے سلسلے میں  متعلقہ  سفارت خانہ اور وزارت خزانہ پاکستان کو کہا جائے کہ  سعودی عرب میں پاکستانیوں کے جمع شدہ  ویلفیر  فنڈ  جو  لاکھوں ریال ہے  سے  اسکولوں کے  اساتذہ  اور  طلباء کے والدین کے مسئلے کو حل کیا جائے،  واضح رہے کہ  ان میں سے  کئی اسکولوں میں  کم آمدن والے  والدین کے بچے زیر تعلیم ہین  اور اسکول  طلباء و طالبات  فیسیں مانگ رہا ہے۔  کچھ اسکولوں نے  والدین کو رعائت دی ہے کہ  وہ  قسطوں میں  فیسیں ادا کرسکتے ہیں جبکہ والدین کاکہنا ہے کہ یہ فی الحال ممکن نہیں چونکہ  چھوٹے کاروبار بند ہیں  اور تنخواہیں کب ملینگی  اور کتنی ملینگی  اسکا علم نہیں، ان اسکولوں کے  اساتذہ کا  کہنا ہے اگر فیسیں بروقت نہ  جمع ہوسکیں تو  اساتذہ اپنے تنخواہوں سے محروم ہوجاینگے۔ ایک اطلاع کے مطابق جدہ کے عزیزیہ اسکول میٰں  اس ماہ  صرف  ۰۸  ہزار ریال  فیسوں کی مد میں آئے ہین جبکہ  اسکول کی اساتذہ کی  تنخواہیں اور اخراجات   ایک لاکھ ساٹھ ہزار  ہیں۔  کچھ اسکولوں نے  طلباء و طالبات کی  دو ماہ کی  بسوں کی فیس معاف کی ہے  جنکی مالیت  400 ریال فی بچہ ہے  اور اس  اقدام سے بیس فیصد سے زیادہ  بچے فائدہ نہیں اٹھا سکے گے۔والدین نے کہا  ہے کہ فوری ضرورت ہے  کہ    سعودی عرب   اوؤرسیز  پاکستانیوں سرکے  جمع شدہ    ویلفئیر  فنڈ سے  فیسوں   اور اساتذہ کی تنخواہوں کی مد میں ادائیگیان کی جائیں اور پاکستانی  تعلیمی ادارے  قائم رہ سکیں نیز والدین پر  بلاوجہ بوجھ نہ پڑے۔ چونکہ ان فیسوں کی نہ ادائیگیان ممکن ہیں اور نہ ہی اسکول  اساتذہ کو  تنخواہیں ادا کرسکے گے۔