کورونا کے خلاف پاکستان میں تیار کی گئی دوائی کا چوہوں پر تجربہ کامیاب ہوگیا

کورونا کے خلاف پاکستان میں تیار کی گئی دوا کا چوہوں پر تجربہ کامیاب ہوگیا ہے اس حوالے سے ڈاؤ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر سعید قریشی کا کہنا ہے کہ پاکستانی ماہرین نے جو دوا تیار کی ہے اس کا چوہوں پر کیا جانے والا ٹرائل کامیاب ہوگیا ہے اس دوا کے ذریعے کورونا وائرس کا علاج ممکن ہوگیا ہے اور اب ہم نے ڈریپ سے انسانوں پر ٹرائل کی اجازت مانگی ہے ، ان کا کہنا تھا کہ جب کوئی شخص بیمار ہوتا ہے تو اس کے جسم میں اینٹی باڈیز پیدا ہوتی ہیں یہ امیونو لوجیکل رسپانس ہوتا ہے جسم کا کسی بھی حملہ آور آرگینیزم کے خلاف اس طریقہ کار میں ہم کو وڈ 19 کے اینٹی باڈیز کو نیوٹرلائز کریں گے جس کے استعمال سے بیماری کے اینٹی جن ختم ہو جائیں گے اسے میڈیکل اصطلاح میں غیرفعال کہا جاتا ہے ۔

پروفیسر سعید قریشی کا کہنا تھا کہ یہ پاکستانی ماہرین کی بہت بڑی کامیابی ہے کہ انہوں نے کورونا کا علاج دریافت کرلیا ہے اور جو ہو پر اس کا استعمال اس لیے کیا گیا تاکہ یہ دیکھا جا سکے کہ یہ زہریلی تو نہیں ہے اس حوالے سے ہماری تحقیق صحیح نکلی ہے ابھی یہ ٹرائل کے مراحل میں ہے اسلئے مارکیٹ میں آنے کے لئے اس میں وقت لگے گا کیونکہ مارکیٹ کرنے سے پہلے ہم پانچ سے دس مریضوں پر کامیاب استعمال کرنا چاہیں گے۔