ایک شہر سے دوسرے شہر اور سندھ سے دیگرصوبوں کو ٹیکسی میں مسافر لے جانے والے ڈرائیورز کے خلاف کارروائی کے جائے

 
ایک شہر سےدوسرے شہر اور سندھ سے دیگرصوبوں کو ٹیکسی میں مسافر لے جانے والے ڈرائیورز کے خلاف کارروائی کے جائے. اویس قادرشاہ
سندھ سے پنجاب, کے پی اور بلوچستان ٹیکسیوں میں 4 سےزائدافراد سفرکررہے ہیں, کورونا وائرس پھیل سکتا ہے, اویس شاہ
محکمہ کے افسراناور پولیس ڈرائیورز کے خلاف کارروا ئی کرکے گاڑی تھانے میں بند کریں. اویس قادرشاہ
شہری ایس ایچ اوسے اجازت لیکرایمرجنسی کے طورپرٹیکسی استعمال کر سکتے ہیں, اویس قادرشاہ
کراچی(اسٹافرپورٹر) سندھ حکومت نے لاک ڈاؤن کے دوران ٹیکسی میں سفرکرنے والوں کے لئے متعلقہ ایس ایچ او کا اجازت نامہ لازمی قرار دیتے ہوئے کہا ہےکہ ایک شہر سے دوسرے شہر اور سندھ سے دیگرصوبوں کو ٹیکسی میں مسافر لے جانے والےڈرائیورز کے خلاف کارروائی کے جائے. وزیرٹرانسپور ٹ سندھ سید اویس قادرشاہنے مزید ہدایتیں جاری کرتے ہوئے کہا کہ سندھ سے پنجاب, کے پی اور بلوچستان ٹیکسیوں میں 4 سےزائدافراد سفرکررہے ہیں, محکمہ کے افسران اور پولیس ڈرائیورز کےخلاف کارروائی کرکے گاڑی تھانے میں بند کریں. صوبائی وزیر نے کہا کہ ایک شہر سےدوسرے شہر کسی کو جانا ہوگا تو وہ متعلقہ تھانے کے ایس ایچ او سے اجازت نامہ لیکرجائے گا,شہری ایس ایچ او سے اجازت لیکرایمرجنسی کے طورپرٹیکسی استعمال کر سکتے ہیں, ٹیکسیمیں ایمر جنسی کے طور پر ڈرائیور کے ساتھ ایک شہری کو سفر کرنے کی اجازت ہے, ٹیکسیمیں سفر کرنے والے افراد ایس ایچ او کا اجازت نامہ ساتھ رکھیں, جنکے پاس اجازت نامہ نہیں ہوگا اس کی گاڑی تھانے میں بند کردی جائے. اویسشاہ نے کہا کہ ٹیکسی میں دیگر صوبوں کو جانے پر بھی پابندی ہے, خلافورزی کرنے پرکارروائی ہوگی, ٹرانسپورٹ پر مکمل پابندی ہےشہری بلاوجہ سفر نہ کریں. انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن میں بلاوجہ کسی کو بھی سفرکرنے کی اجازت نہیں ہے, گاڑی میں زیادہ افراد کے سفر کرنے سےکورونا وائرس پھیل سکتا ہے.