بھارتی فوج کی ایل او سی پر بلا اشتعال گولہ باری، بچی سمیت 4 شہری زخمی ہو گئے

) بھارتی فوج کی ایل او سی پر بلا اشتعال گولہ باری ،پاک فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے بھارتی فوج کو منہ توڑ جواب دیا۔ تفصیلات کے مطابق آئی ایس پی آر (انٹر سروس پبلک ریلیشن ) کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی فورسز کی ایل او سی کے ساتھ شاردہ، شاہ کوٹ، ڈھڈنیال سیکٹر پر بلا اشتعال گولہ باری کی گئی۔
بھارتی فورسز کی اشتعال انگیزی سے چھری ، لہن والی گاؤں کی بچی سمیت 4 شہری زخمی ہو گئے۔ بھارت کی جانب سے سول آبادی کو نشانہ بنایا گیا۔ پاک فوج نے بھارتی چوکیوں کو موثر انداز میں نشانہ بنایا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ 2020 میں بھارتی فوج نے اب تک سیز فائر کی 708 مرتبہ خلاف ورزی کی۔ 2020 میں بھارتی فوج کی سیز فائر کی خلاف ورزیوں میں 2 شہری شہید جبکہ 42 زخمی ہوئے۔

جبکہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں بھارتی فوج نے متعدد بار سیز فائر کی خلاف ورزیاں کی۔ واضح رہے اس سے قبل فضائی حدود کی خلاف ورزی پر پاک فوج نے بھارتی ڈرون مار گرایا تھا ۔ آئی ایس پی آر کے جاری کردہ بیان کے مطابق بھارتی ڈرون نے ایل او سی کے سنکھ سیکٹر پر فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تھی ۔ بتایا گیا ہے کہ بھارتی ڈرون پاکستان میں نگرانی کیلئے بھجوایا گیا تھا ۔
بھارتی ڈرون 600 میٹر تک پاکستان کی حدود میں گھسا جس کا پاک فوج نے موثر جواب دیتے ہوئے جاسوس ڈرون مار گرایا ہے۔ آئی ایس پی آر (انٹر سروس پبلک ریلیشن ) کا کہنا ہے کہ ڈرون کا جاسوسی کرنا فضائی معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔ یہ بات بھی قابل غور ہے بھارت اس سے قبل بھی ایل او سی سمیت فضائی حدود کی خلاف ورزی کر چکا ہے ۔ جس کا پاک فوج نے منہ توڑ جواب دیا ۔ ایک بار پھر سے پاک فوج نے بھارتی ڈرون مار گرایا ہے