قومی شناختی کارڈ سے محروم بہاری خاندان

وفاقی حکومت کا احساس پروگرام صوبائی حکومت کا راشن پروگرام JDC اور دیگر امدادی اداروں کی ریلیف سبCNIC سے مشروط ہے۔ وہ محب وطن بہاری خاندان کیاکریں جنھیں نادرا کے ظالمانہ اقدام کے تحت CNIC سے محروم کردیا گیاہے۔ انکی حب الوطنی دیگر پاکستانيوں کی بہ نسبت اسلیۓ زیادہ مسلم ہے کہ انھوں نے متعدد مرتبہ تن من دھن سے پاکستان کیلیۓ قربانیاں دی ہیں۔

کیا کرونا لاک ڈاٶن سے انکے چولہے ٹھنڈے نہیں ہوۓ؟ کیاوہ انسان نہیں ہیں؟ کیاانھیں بھوک نہیں لگتی؟کیا دیگر ضروریات زندگی پر انکا حق نہیں؟
قومی شناختی کارڈ کےبغیر سرکاری ملازمت تو دورکی بات کوٸ چھوٹی موٹی پرائيویٹ ملازمت پر بھی نہیں رکھتا۔ ایسے میں طویل لاکڈاٶن سے ان لوگوں کی کیاحالت ہوگی جو پہلے سے ہی بے روزگار تھے۔
ارباب اختیات بالخصوص چیف جسٹس پاکستان اور آرمی چیف اورنگی لانڈھی مجیدکالونی اوردھابیجی کے مکین ہزاروں محب وطن بہاریوں کے CNIC بحال کروانے کا حکم دیں اس سے قبل کہ کوٸ المیہ جنم لے