پاکستان اسٹیٹ آئل میں بھاری بھر کم تنخواہوں پر رکھے گئے افسران کے خلاف نیب کی تحقیقات شروع

قومی احتساب بیورو نے پی ایس او میں اعلیٰ افسران کی متنازعہ اور بھاری بھرکم تنخواہوں پر کی گئی بھرتیوں کے خلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ نیب نے پٹرولیم ڈویژن سے سٹیٹ آئل کمپنی میں کی گئی جی ایم ،کمپنی سیکرٹری اور ڈپٹی جی ایم کی بھرتیوں کے طریقہ کار کی تفصیلات طلب کر لی ہیں۔زرائع کے مطابق نیب کو شکایت موصول ہوئی کہ پی ایس او میں 2013 سے2018کے دوران اعلیٰ افسران کو سیاسی بنیادوں پر بھرتی کیا گیا ۔ نیب اس کے علاوہ سابق چیئرمین اور دیگر اہم افسران کے خلاف بھی ریفرنس بنا چکی ہے اور قومی خزانے کو بھاری نقصان پہنچانے کے معاملے میں سابقہ افسران کی گرفتاری متوقع ہے ۔اب نیب کی جانب سے پاکستان اسٹیٹ آئل میں بھاری تنہائی لینے والے افسران بھی تحقیقات کی زد میں آگئے ہیں زیادہ تر افسران سیاسی سفارشوں پر رکھے گئے تھے یا ان کے سیاسی روابط اور رشتہ داریاں ہیں ۔