کراچی میں ولاسٹی ٹیکسٹائل نے 700 سے زائد ملازمین کو فارغ کردیا ملازمین کا احتجاج

کراچی میں واقع ولاسٹی ٹیکسٹائل ملز کی انتظامیہ نے کرونا وائرس سے پیدا شدہ صورتحال اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے 700 سے زائد ملازمین کو ملازمت سے فارغ کر دیا ہے ٹیکسٹائل مل کے مالکان نے ملازمت سے فارغ کیے جانے پر انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا مظاہرین میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے انہوں نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے اور ملازمت سے فارغ کیے جانے کے انتظامیہ کے اقدام پر احتجاج کر رہے تھے ۔یاد رہے کہ حکومت نے ہدایت کی تھی کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے لاک ڈاؤن کی پالیسی پر عمل کیا جائے اور اس دوران ملازمین کو پوری تنخواہ دی جائے لیکن ٹیکسٹائل مل کی انتظامیہ نے پوری تنخواہ دینا تو دور کی بات ملازمین کو ملازمت سے ہی فارغ کر دیا جس پر ملازمین سراپا احتجاج ہیں ۔ دوسری طرف محنت کش مزدوروں کے حقوق کے لیے آواز اٹھانے والی تنظیموں کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ یہ صورتحال پورے ملک میں ہے ملازمین کو ملازمتوں سے مارے کیا جا رہا ہے اور حکومت صرف زبانی اعلانات کر رہی ہے انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ وفاقی اور صوبائی حکومتیں ایسی صورتحال کا فوری طور پر نوٹس لینے اور اداروں کو ملازمین کو فارغ کرنے سے روکا جائے یا پھر لاک ڈاون ختم کیا جائے۔