فواد چوہدری وزیر اعلیٰ پنجاب؟

فواد چوہدری کی خواہش ضرور ہو سکتی ہے کہ وہ پنجاب کے وزیر اعظم بن جائیں اور وہ شاید یہ سمجھتے بھی ہیں کہ وہ صوبے کو بہتر انداز سے چلا سکتے ہیں لیکن سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ عمران خان کبھی بھی فواد چوہدری کو پنجاب جیسا صوبہ حوالے نہیں کریں گے کیونکہ فواد چوہدری عمران خان کے ساتھ نہیں بلکہ اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ہیں جبکہ عثمان بزدار کی سو فیصد نہیں بلکہ دو سو فیصد وفاداری عمران خان کے ساتھ ہے عثمان بزدار عمران خان کو دھوکا نہیں دے سکتے لیکن فواد چوہدری پہلے ہی تین چار پارٹیاں تبدیل کر چکے ہیں آج بھی ان کی وفاداری اسٹیبلشمنٹ کےساتھ ہیں ویسے بھی پنجاب وہ صوبہ ہے جس کا وزیر اعلی بنا ہر سیاستدان اور کسی بھی شخص کی خواہش ہو سکتی ہے پرویز الہی اپنے بیٹے منصف الہی کے لیے زور لگاتے آرہے ہیں جبکہ چوہدری نثار علی خان نے ایک عمر اس امید اور خواہش میں گزاری ہے کہ وہی وزیراعظم بننے کا موقع ملے کچھ عرصے سے خسروبختیار بھی اپنے بھائی کے لئے کوشش کر رہے ہیں شاہ محمود قریشی بھی پنجاب کے وزیراعلیٰ بننے کے خواہشمند رہے ہیں پنجاب میں وہ لوگ قسمت کے دھنی رہے ہیں جنہیں لاٹری نکلنے کی طرح اچانک وزارت اعلی پنجاب ملی جن میں دوست محمد کھوسہ ۔سردار عارف نکی۔ غلام حیدر وائیں منظور وٹو ۔نجم سیٹھی ۔حسن عسکری رضوی اور شیخ اعجاز نثار جیسے نام نمایاں رہے ہیں۔