متحدہ عرب امارت میں کورونا وائرس تیزی سے پھیلنے لگا 20 ہزار سے زائد پاکستانیوں کی وطن واپسی کی تیاری

متحدہ عرب امارت میں کورونا وائرس تیزی سے پھیلنے لگا، گزشتہ 24 گھنٹے میں 294 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ، جبکہ گزشتہ روز رپورٹ کیسز کی تعداد241 تھی، جس میں ایک روز بعد 53 کیسز کا اضافہ ہوا ہے۔ وزارت صحت متحدہ عرب امارات کے آج اتوار کو جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق یواے ای میں کورونا وائرس سے متاثرہ مصدقہ کیسز میں مزید 294 نئے کیسز کا اضافہ ہوگیا ہے۔
جس سے متحدہ عرب امارات میں کورونا کے مجموعی کیسز کی تعداد 1798 ہوگئی ہے۔ اسی طرح مزید 5 افراد مکمل صحت یاب بھی ہوگئے ہیں۔ جس سے صحت یاب افراد کی تعداد 144ہوگئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ نئے رپورٹ ہونے والے مریض مختلف ممالک کے شہری ہیں۔ دوسری جانب کورونا سے خوفزدہ متحدہ عرب امارات میں مقیم 20 ہزار سے زائد پاکستانیوں نے بھی وطن واپسی کی تیاری کرلی ہے، دبئی میں پاکستانی قونصل جنرل نے بھی وطن واپس جانے والوں کو باقاعدہ رجسٹرڈ کرلیا ہے، سینکڑوں لوگوں نے دبئی قونصل خانے میں جمع ہوکر مطالبہ کیا کہ ان کی وطن واپسی کی جلد فلائٹ بُک کروائی جائے۔

دبئی میں پاکستانی قونصل جنرل نے پاکستانی شہریوں کی وطن واپسی کیلئے رضامندی جاننے کیلئے ایک 3 اپریل کو مہم لانچ کی تھی، تاکہ ایسے لوگوں رجسٹرڈ کیا جاسکے جو واپس جانا چاہتے ہیں۔ مزید برآں یواے ای کے مرکزی بینک نے کورونا وائرس کے تناظر میں خلیجی ریاستوں کے معاشی بحران کو سہرا دینے کیلئے مجموعی طور پر 70 ارب ڈالر کے امدادی پیکج کا اعلان کردیا۔ نومنتخب گورنر عبدالحمید سعید نے کہا کہ اعلان کردہ اضافی اقدامات سے مالی اداروں پر دباؤ کو مؤثر طریقے سے دور کیا جا سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ کاروبار اور گھریلو سطح پر مالی امداد تک پہنچنے کے لیے مطلوبہ ریلیف اور مستقل رسائی مؤثر رہے گی۔

) متحدہ عرب امارات میں مقیم 20 ہزار سے زائد پاکستانیوں نے وطن واپسی کی تیاری کرلی ہے، دبئی میں پاکستانی قونصل جنرل نے بھی وطن واپس جانے والوں کو باقاعدہ رجسٹرڈ کرلیا ہے، سینکڑوں لوگوں نے دبئی قونصل خانے میں جمع ہوکر مطالبہ کیا کہ ان کی وطن واپسی کی جلد فلائٹ بُک کروائی جائے۔ تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کے باعث دنیا بھر میں لوگوں پرخوف نے پنجے گاڑھے ہوئے ، جہاں پر اپنے ممالک کے اندر رہتے ہوئے شہری شدید مسائل سے دوچار ہیں وہاں پراپنے وطن سے ہزاروں میل دور دوسرے ممالک میں محنت مزدوری اور ملازمت کرنے والے افراد بھی شدید پریشانی میں مبتلا ہیں۔
متحدہ عرب امارات میں رہائش پذیر اوروزٹ ویزے پر جانے والے پاکستانیوں نے بھی وطن واپسی کی خواہش کا اظہار کردیا ہے۔

دبئی میں پاکستانی قونصل جنرل نے پاکستانی شہریوں کی وطن واپسی کیلئے رضامندی جاننے کیلئے ایک 3 اپریل کو مہم لانچ کی، تاکہ ایسے لوگوں رجسٹرڈ کیا جاسکے ۔اس مہم کے صرف تین روز میں 20000 پاکستانیوں نے وطن واپسی کیلئے رجسٹریشن کروالی ہے۔

سینکڑوں پاکستانیوں نے برج دبئی میں واقع قونصل جنرل میں جمع ہوکر باقاعدہ مطالبہ کیا ہے کہ ہمیں پاکستان بھیجا جائے اور ہماری جلد بکنگ کروائی جائے۔واضح رہے امارتی ایئرلائنز نے ایسے غیرملکیوں کیلئے فلائٹ آپریشن شروع کرنے کا اعلان کیاہے، جو یواے ای میں ہیں اور اپنے وطن واپس جانا چاہتے ہیں۔ تاہم ابھی تک جن ممالک کیلئے امارتی ایئرلائن ایمریٹس نے فلائٹ آپریشن شروع کرنے کا اعلان کیا ہے، اس لسٹ میں پاکستان کا نام شامل نہیں۔ لیکن پاکستانی سفاتخانہ رجسٹرڈ لوگوں کی بناء پر ایئرلائن سے فلائٹ چلانے کا مطالبہ کرسکے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں