حکومت کو دیوان یوسف کی تجاویز سمجھ میں آگئیں، وزیر اعلیٰ نے مخصوص انڈسٹری چلانے کیلئے اپنی ٹیم سے بات کرنیکی حامی بھرلی

حکومت کو دیوان یوسف کی تجاویز سمجھ میں آگئیں۔ وزیر اعلی نے مخصوص انڈسٹری چلانے کے لیے اپنی ٹیم سے بات کرنے کی حامی بھرلی۔ اپنی ٹیم سے مشاورت کریں گے، ہم دیکھیں گے کہ کون سی صنعتیں کس ایس او پی کے تحت کھول سکتے ہیں۔ ایس آر بی کی ٹیکسز میں بھی دیکھتا ہوں مدد کر سکتے ہیں، APTMA کی طرف سے کورونا وائرس فنڈ میں 20 ملین روپے  عطیہ کرنے کا اعلان۔ یاد رہے کہ سب سے پہلے پاکستان کے نام پر بزنس مین دیوان محمد یوسف فاروقی نے حکومت کو یہ تجویز پیش کی تھی کہ مکمل لاک ڈاؤن کی بجائے صرف ان مقامات پر لاگو کیا جائے جہاں ہجوم یا عوام کی بڑی تعداد میں جمع ہونے کا خدشہ ہوتا ہے لیکن جن فیکٹریوں اور کارخانوں میں لیبر کالونی بنی ہوئی ہے اور وہاں پر محفوظ طریقے سے احتیاطی تدابیر اختیار کی جاسکتی ہیں اور محفوظ ماحول فراہم کیا جا سکتا ہے وہاں کام کرنے کی اجازت دی جائے ۔جن کارخانوں اور فیکٹریوں میں حفاظتی اقدامات کی فراہمی کو یقینی بنایا جا رہا ہے وہاں پر فیکٹریوں اور کارخانوں کو جلانے کی اجازت دینی چاہیے تاکہ بیروزگاری کا مسئلہ سنگین صورت اختیار نہ کرے ۔صوبائی حکومت کو دیوان یوسف اور دیگر صنعتکاروں کی ان تجاویز کے فوائد سمجھ میں آوے ہیں لیکن ابھی وفاقی سطح پر ایسے اقدامات کا اعلان ہونا باقی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں