پاکستان میں کورونا کے پہلے صحتیاب مریض نے پلازمہ عطیہ کردیا

کورونا کےخلاف پیسوامیونائزیشن طریقہ علاج کی جانب پہلا قدم اٹھاتے ہوئے پاکستان میں کورونا کے پہلے صحتیاب مریض یحیٰ جعفری نے پلازمہ عطیہ کردیا۔ماہر امراض خون ڈاکٹر ثاقب انصاری کے ہمراہ پریس کانفرنس میں یحیٰ جعفری کا کہنا تھا کہ یہ وائرس کچھ ہی عرصے میں تاریخ بن جائے گا،لیکن ہماری کوشش یاد رکھے جائے گی،ہاتھ دھوئیں گھروں سے باہر نہ نکلیں،اللہ سے امید ہےہم پاکستانی کامیاب ہوں گے۔ دوسری جانب ماہر امراض خون ڈاکٹر ثاقب انصاری کا کہنا تھا کہ کورونا سے متاثرہ مریض حکومت کی اجازت کے منتظر ہیں، کورونا سے صحت یاب ہونے والے نوجوان مریض جن کی عمریں 18 سے 50 سال درمیان ہیں وہ اپنا پلازمہ عطیہ کرکے دیگر مریضوں کی زندگیاں بچا سکتے ہیں۔یحیٰ جعفری صحت یاب ہوکر ہمارے درمیان موجود ہیں ،اگر حکومت اجازت دے تو ہمارے پاس تمام مشینری اورورک فورس موجود ہے ۔ واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل ماہر امراض خون ڈاکٹرطاہرشمسی نے تجویز دی تھی کہ کورونا وائرس سے بچنے کے لیے پیسیو امیونائزیشن کرائی جائے۔وائرس سے بچنے کے لیے پیسیو امیونائزیشن کا طریقہ 100 سال سے رائج ہے، اگر حکومت ہدایت دیتی ہے تو پلازما اکھٹا کرنے اور تیاریوں میں 2 ہفتے لگیں گے۔ان کا کہنا ہے کہ پلازما اکھٹا ہونے لگے گا تو کورونا وائرس سے شدید متاثرہ مریضوں کو بچایا جاسکے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں