برطانیہ میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 23 ہوگئی!

برطانیہ کی وزارتِ صحت نے ہفتے کے روز کرونا وائرس سے متاثرہ مزید تین افراد کی تصدیق کی ہےجس کے بعد اس یورپی ملک میں چین سے پھیلنے والے اس مہلک وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد تیئیس ہوگئی ہے۔
محکمہ صحت نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’29 فروری کو صبح نو بجے (0900 جی ایم ٹی)تک برطانیہ میں کل 10483 افراد کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں۔ان میں 10460 افراد کے ٹیسٹوں کے منفی نتائج آئے ہیں اور صرف 23 افراد کے اس مہلک وائرس میں مبتلا ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔‘‘ وزیراعظم بورس جانسن نے جمعہ کو کہا تھا کہ کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنا ان کی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔انھوں نے یہ بیان اس مہلک وائرس سے ایک شخص کی ہلاکت کے بعد جاری کیا تھا۔یہ متوفّیٰ جاپان میں لنگرانداز ایک کروز شپ سے کرونا وائرس کا شکار ہوا تھا-العربیہ ڈاٹ نیٹ ،ایجنسیاں- اٹلی کے بعد فرانس میں بھی کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے بڑے عوامی اجتماعات پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔
صدر ایمانوئل میکرون کی زیر صدارت فرانس کی دفاعی کونسل کا ہنگامی اجلاس ہوا۔
اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ فرانس کورونا وائرس کی وباء کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے پانچ ہزار سے زیادہ افراد کے اندرونی عوامی اجتماعات پر پابندی عائد کر رہا ہے۔
محدود جگہوں پر بڑے اجتماعات کی منسوخی کا اعلان وزیر صحت اولیور ورن نے ہفتے کے روز خصوصی حکومتی اجلاس کے بعد کیا۔
وزیر صحت نے کہا کہ ملک بھر میں محدود جگہوں پر پانچ ہزار سے زائد افراد کے اجتماعات منسوخ کردیئے جائیں گے۔
اس سے پہلے لوگوں نے مصافحہ سے گریز کرنے کی سفارش کی تھی۔
انہوں نے کہا کہ پیرس کے شمال میں واقع  خطے میں عوامی اجتماعات پر مکمل طور پر پابندی عائد ہے، جہاں کورونا کے متعدد کیسز سامنے آئے ہیں۔
انہوں  نے مزید کہا کہ  لوگ شاپنگ کرسکتے ہیں لیکن انہیں غیر ضروری سفر سے گریز کرنا چاہئے۔ وزیر صحت فرانس نے  کہا کہ فرانس میں کورونا وائرس کے 16 نئے کیس سامنے آئے ہیں جن میں فروری کے آخر سے متاثرہ افراد کی تعداد 73 ہوگئی ہےاور دو افراد ہلاک ہوگئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں