فوادچوہدری نےافغان امن معاہدے کاکریڈٹ عمران خان کودے دیا

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فوادچودھری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنےپیغام میں کہاہے کہ افغانستان کے لوگوں کو مبارک ہو ، انہوں نے کہا کہ آج دوحہ میں ہونے والے معاہدے سے افغانستان میں نئے دور کاآغاز ہوگا۔ فواد چوہدری نے مزید کہا کہ امن معاہدے سے امریکی کی لمبی ترین خارجی جنگ کاخاتمہ ہو جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اس سب کا کریڈٹ عمران خان کو جاتا ہے جو پی ٹی آئی حکومت کے مین مقصد کے طور پر ہمیشہ افغانستان میں امن کے خواہاں رہے۔امریکا اور طالبان کے درمیان دو دہائیوں پرمحیط طویل جنگ کے خاتمے کے لیے تاریخی امن معاہدہ آج قطر میں ہورہاہے۔ وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی پاکستان کے نمائندے کے طورپرآج دوحہ میں امریکہ اورافغان طالبان کے درمیان امن معاہدے کی دستخطوں کی تقریب میں شرکت کریں گے۔جبکہ مختلف ممالک کے وزرائے خارجہ سمیت پچاس ممالک کے نمائندے معاہدے پردستخطوں کی تقریب میں شرکت کریں گے۔
افغان حکام کی جمعے کو قطر میں طالبان اراکین سے ملاقات ہوئی ہے جس میں امریکا اور طالبان کے معاہدے سے قبل قیدیوں کی تبادلہ کے منصوبہ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔افغان حکام نے مستقل جنگ بندی کیلئے طالبان 5 ہزار سے زائد قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے ۔دوحہ معاہدے کے تحت افغانستان سے امریکی افواج کا انخلا ہو گا جب کہ اس کے جواب میں طالبان یہ ضمانت دیں گے کہ افغان سرزمین القاعدہ سمیت دہشت گرد تنظیموں کے زیر استعمال نہیں ہوگی۔
اس حوالے سے وزیرخارجہ شا ہ محمودقریشی نے پاکستان کا موقف واضح کرتے ہوئے کہاہے کہ امریکہ اورافغان طالبان کے درمیان امن معاہدے سے خطے میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔انہوں نے کہاکہ افغانستان میں امن سے وسطی ایشیا کے ساتھ ہمارے روابط بڑھیں گے۔وزیرخارجہ نے کہاکہ امن واستحکام سے پاکستان اورافغانستان کے درمیان دوطرفہ تجارت کو فروغ دینے کے لئے شاندارمواقع پیدا ہوں گے۔انہوں نے کہاکہ افغانستان میں امن سے پاکستان کوکاسا1000منصوبے سے استفادہ کرنے اورملک میں توانائی کے بحران پرقابوپانے میں مدد ملے گی۔وزیرخارجہ نے مزید کہا پاکستان نے امن کے لئے اپنی سیکیورٹی فورسز، پولیس اور شہریوں کی قربانیاں دے کربھاری قیمت اداکی ہے۔
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس موقع پر کہا کہ افغان عوام موقع سے فائدہ اٹھائیں، امن معاہدے سے نئے مستقبل کا موقع مل سکتا ہے۔ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ بھی کہا کہ اُن کی ہدایات کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو طالبان نمائندوں کے ساتھ سمجھوتے کی تقریب میں شامل ہوں گے، وزیر دفاع مارک ایسپر افغان حکومت کے ساتھ مشترکہ اعلامیہ جاری کریں گے
courtesy GNN URDU

اپنا تبصرہ بھیجیں