امریکی صدر کی اسلام آباد آمد کا امکان ڈونلڈ ٹرمپ بھارت کا دورہ کرنے کے بعد اسلام آباد آ سکتے ہیں۔ ذرائع

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھارت کے دورے کے بعد اسلام آباد کا دورہ بھی کر سکتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ آج بھارت کے دورے پر نئی دہلی پہنچیں گے۔اس بات کا امکان بھی موجود ہے کہ ٹرمپ دورہ بھارت کے بعد پاکستان آ سکتے ہیں۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھارت کے 2 روزہ دورے کے دوران بھارت اور پاکستان سے کشمیر میں لائن آف کنٹرول(ایل او سی) پر قیام امن جبکہ کشیدگی کو بڑھانے والے اقدامات یا بیانات سے گریز کرنے پر زور دیں گے۔
ٹرمپ انتظامیہ کے سینئر عہدیدار نے امریکی صدر کے دورے کے حوالے سے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے دورے کے دوران بھارتی رہنماں سے زیر بحث آنے والے امور اور منصوبوں کے حوالے سے بتایا۔مسئلہ کشمیر پر دوبارہ ثالثی کی پیشکش سے متعلق کیے جانے والے سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ سے جو آپ سنیں گے وہ حوصلہ افزا ہوگا، بھارت اور پاکستان میں کشیدگی میں کمی، دونوں ممالک کے باہمی مذاکرات میں شمولیت تاکہ دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی ختم ہو۔
ان کا کہنا تھا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ کامیاب مذاکرات کی بنیاد پاکستان کی اپنی حدود میں دہشت گردی اور شدت پسندی کے خلاف کریک ڈان کو برقرار رکھنا ہے اور ہمیں اس کی امید بھی ہے۔انہوں نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ امریکی صدر دونوں ممالک کو لائن آف کنٹرول پر قیام امن کی کوششوں کے لیے زور دیں گے اور ایسے اقدامات یا بیانات جس سے خطے میں کشیدگی میں اضافہ ہو، سے گریز کرنے کا کہیں گے۔
صدر ٹرمپ کے ساتھ امریکہ کی خاتون اول میلانیا ٹرمپ، ان کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ اور داماد جیرڈ کشنر بھی آرہے ہیں بیٹی اور داماد صدر کے مشیر ہیں ایوانکا ٹرمپ نومبر 2017 میں وزیر اعظم مودی کی دعوت پر نوجوان صنعت کاروں کی ایک عالمی کانفرنس میں شرکت کی غرض سے بھی حیدرآباد آئی تھیں.ان کے ساتھ وزیر تجارت، توانائی کے وزیر قومی سلامتی کے مشیر اور وائٹ ہاﺅس کے چیف آف اسٹاف بھی آ رہے ہیں‘احمد آباد میںجہاں سڑک کے اطراف کچی بستیوں کو چھپانے کے لیے جہاں دیوار تعمیر کی جا رہی ہے وہیں سڑک کے اطراف امریکی صدر کو خوش آمدید کہنے کے لیے لوگوں کو جمع کرنے کی تیاریاں بھی جاری ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں