ساری دنیا کو گالیاں دینے والا ایک لفظ برداشت نہ کرسکا، عوام کو کنگال، بھکاری اور غربت میں دھکیلنے پر نوجوان سوال تو پوچھے گا نا؟

اکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ وزیراعظم کا نوجوان طالبعلم کو تقریب سے نکالنا قابل مذمت ہے، ساری دنیا کو گالیاں دینے والا ایک لفظ برداشت نہ کرسکا، عوام کو کنگال، بھکاری اور غربت میں دھکیلنے پر نوجوان سوال تو پوچھے گا نا؟ عمران صاحب کی ذہنی حالت وزیراعظم کے دفتر کیلئے فٹ نہیں۔
انہوں نے وزیراعظم عمران خان کے نوجوان کو تقریب سے نکالنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ساری دنیا کو گالیاں دینے والے سے ایک لفظ برداشت نہ ہوا۔ انہوں نے کہا کہ عمران صاحب قوم کے مستقبل نوجوانوں کو اقتدار کی طاقت سے بے عزت کرنا قابل مذمت وقابل افسوس ہے۔ عوام کو کنگال، بھکاری اور غریب کرنے والے سے نوجوان سوال تو پوچھے گا نا۔

احتجاج تو کرے گا نہ ؟ عمران صاحب کی ذہنی حالت وزیراعظم کے دفتر کیلئے فٹ نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ کنٹینر پہ کھڑے ہو کر نوجوانوں سے جھوٹ بولنے والے ، جھوٹے وعدے وعدے کرنے والے چور ، کرپٹ اور جھوٹے سے نوجوان سوال تو کرے گا نہ ؟ احتجاج تو کرے گا نا ؟ مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران صاحب جب چار سال میں پشاور میٹرو کے کھڈے 150 ارب کے ہو جائیں گے تو نوجوان سوال تو پوچھے گا نا، احتجاج کرنا تو جرات ہے نا ؟ عمران صاحب جب اٹھارہ ماہ میں ایک کڑوڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھروں میں سے ایک گھر اور ایک نوکری بھی نہ ملے گی تو نوجوان سوال تو پوچھے گا نا ؟ انہوں نے کہا کہ عمران صاحب جب اٹھارہ ماہ میں گیس 300 فیصد اور بجلی 250 فیصد مہنگی ہو گی تو نوجوان سوال تو پوچھے گا نا ، احتجاج تو کرے گا نا؟ عمران صاحب جب اٹھارہ ماہ میں عوام کا آٹا، روٹی ، کاروبار اور روزگار پہ حکمران ڈاکہ ڈالیں گے تو نوجوان سوال تو پوچھے گا نا، احتجاج تو کرے گا نا؟

اپنا تبصرہ بھیجیں