پاکستان کو فلاحی ریاست بنانا میرا مشن ہے: وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان میانوالی پہنچے جہاں انہوں نے جنگلات کی بحالی کے سب سے بڑے منصوبے کا آغاز کیا، وزیر اعظم نے کندیاں میں پودا لگا کر موسم بہار 2020 کی شجر کاری مہم کا آغاز کیاشجر کاری مہم کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان کے لیے شجر کاری بہت اہمیت رکھتی ہے، افسوس ہے جو جنگل انگریز چھوڑ کر گئے وہ ہم نے تباہ کردیے۔ انگریز کندیاں میں 20 ہزار ایکڑ پر جنگل چھوڑ کر گئے، آج جنگل تباہ ہوچکا ہے۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ اگر ایسے ہی جنگل تباہ کرتے رہے تو موسمی تبدیلی ہمارا مستقبل تباہ کردے گی۔ اللہ نے پاکستان میں 12 موسم دیے ہیں، اتنے وسائل کے ساتھ ہماری زرعی پیداوار مہنگی اور کمی ہونی ہی نہیں چاہیئے۔ درخت کاٹنے والوں کو جیل میں ڈالنا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ میانوالی میں تعلیم پر توجہ دینی ہے، اسکول ٹھیک کرنے ہیں۔ میانوالی میں اسپتال ٹھیک کر رہے ہیں اور بنا بھی رہے ہیں۔ نمل اب عالمی یونیورسٹی بننے جارہی ہے۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ملک ایک چھوٹے سے علاقے میں پیسہ خرچ کرنے سے آگے نہیں بڑھتا، پاکستان کو فلاحی ریاست بنانا میرا مشن ہے۔ پاکستان میں لوگوں کو روزگار دینا ریاست کی ذمے داری ہونی چاہیئے تھی۔

انہوں نے مزید کہا کہ کفالت پروگرام کے تحت انتہائی غریب افراد کی امداد کی جائے گی، 80 ہزار نوجوانوں کو کاروبار کے لیے بلا سود قرض دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں