ہم نیوز کراچی میں کوئی لڑکی نہیں رہی۔۔

ہم نیوز جسے لانچ ہوئے ابھی زیادہ لمبا عرصہ نہیں گزرا، ہم نیٹ ورک کے اس نیوزچینل میں کا جب آغازکیاگیا تو بڑے دعوے کئے گئے تھے کہ اس چینل میں خواتین کو برابر کے حقوق ملیں گے۔۔ہم نیٹ ورک کے زیراہتمام ہر پروگرام سے بھی یہی پراپیگنڈاکیاجاتا رہا کہ ہم نیٹ ورک گروپ میں خواتین بالکل محفوظ ہوتی ہیں اور یہاں ان کے حقوق کا ہر لمحہ خیال رکھاجاتا ہے لیکن پپو نے ہم نیوز میں خواتین کی ہراسمنٹ کی کہانیاں بے نقاب کیں تو کسی کے پاس کوئی جواب نہ تھا، پراسرار سی خاموشی تھی بلکہ ایک دو کیسز میں تو پپو کی مخبری کے بعد ہراسمنٹ والوں کو نوکری سے نکالابھی گیا،پپو نے اب انکشاف کیا ہے کہ ہم نیوز کراچی میں واحد رپورٹر خاتون نے بھی استعفا دے دیا، جس کے بعد ہم نیوز کراچی بیورو میں اب کوئی لڑکی نہیں رہی، یعنی کسی بھی شعبے میں کوئی بھی لڑکی ملازم نہیں ہاں البتہ بیورو چیف صاحب ایک یونیورسٹی کی لڑکیوں کو ٹریننگ کے لئے بلاتے رہتےہیں جو اپنی ٹریننگ مکمل ہوتے ہی چلی جاتی ہیں۔۔پپو نے مزید بتایا کہ گزشتہ دنوں گورنر ہاؤس کراچی میں ہم نیٹ ورک کی ایک تقریب میں پھر وہی راگ الاپاگیا کہ یہ گروپ خواتین کی جابس کے حوالے سے بہت اہمیت دیتا ہے اور انہیں ہم نیٹ ورک میں ہر طرح کی سیکورٹی حاصل ہوتی ہے ،ساتھ ہی دعوی کیاگیا کہ اس گروپ میں خواتین بڑی تعداد میں کام کرتی ہیں لیکن افسوسناک صورتحال یہ تھی کہ ہم نیوز کی جانب سے اس تقریب کو کور کرنے کے لئے ایک مرد کو بھیجاگیا تھا، واضح رہے یہ تقریب بھی خواتین کے حوالے سے تھی جہاں بڑے بڑے دعوے کئے جارہےتھے۔۔
a-report-by-imran -junior-

اپنا تبصرہ بھیجیں