دوست سے شادی کرنے کیلئے شوہر کو قتل کرنے والی بیوی 19 سال بعد پکڑی گئی

لاہور میں شوہر کے قتل کی ملزمہ کو 19 سال بعد گرفتار کرلیا گیا۔تفصیلات کے مطابق عورت پر ہونے والے تشدد اور اس کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں پر تو آئے روز خبریں موصول ہوتی رہتی ہیں جن کی پُر زور مذمت بھی کی جاتی ہے لیکن حال ہی میں ایک ایسا واقعہ رپورٹ ہوا ہے جس میں بیوی ہی شوہر کی قاتل بن گئی۔بتایا گیا ہے کہ لاہورمیں شاہدرہ کیانوسٹیگیشن پولیس میں شوہر کے قتل کے ملزمان کو 19 سال کے بعد گرفتار کیا ہے۔
انویسٹی گیشن پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ملزمہ سلامہ بی بی نے 2001 میں اپنے دوست کے ساتھ ملکر خاوند کو قتل کیا تھا۔شوہر کو قتل کرنے کے بعد ملزم خیبرپختونخوا کے علاقے صوابی فرار ہوگئی تھی۔ملزمہ نے اس واردات کے ایک سال بعد اپنے دوست لئیق خان سے شادی رچائی تھی۔شاہدرہ انویسٹی گیشن پولیس نے 19سال سے مفرور ملزم اسلامہ بی بی کو جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے گرفتار کیا ہے۔

جب کہ دوسری جانب بیوی نے شوہر کو قتل کر دیا۔اس سے قبل ایک ایسا ہی واقعہ لاہور میں پیش آ چکا ہے لاہور میں شمالی چھاؤنی کے قریب علاقہ میں بیوی کے ہاتھوں شوہر کے قتل کا ایک افسوسناک واقعہ سامنے آیا جس کے بعد پولیس نے تفتیش کا آغاز کیا تو یہ انکشاف ہوا کہ خاتون نے اپنے عاشق کے ساتھ مل کر اپنے ہی خاوند کو موت کے گھاٹ اُتار دیا۔ق ملزمہ نے اپنے شوہر علی کو پہلے نشہ آور چیز پلا کر بے ہوش کیا جس کے بعد اس کی کنپٹی پر پستول رکھ کر گولی مار کر اسے قتل کر دیا۔
علی نجی ہوٹل میں ملازمت کرتا تھا۔ ملزمہ اور مقتول کے تین بچے بھی تھے۔ دوران تفتیش ملزمہ مریم نے پولیس کو بتایا کہ میرے شوہر کا کردار ٹھیک نہیں تھا۔خاندانی ذرائع کے مطابق مقتول بار بار اپنی بیوی کو ناجائز تعلقات نہ رکھنے اور گھر پر رہنے کی ہدایت کرتا تھا لیکن وہ اُس کی ایک نہیں مانتی تھی-

اپنا تبصرہ بھیجیں