پی ایس ایل 5 کا پاکستان میں انعقاد ….. شکریہ نجم سیٹھی

میاں طارق جاوید 
پی ایس ایل کھبی خواب تھا پھر اس خواب کو نواز شریف حکومت میں نجم سیٹھی نے تعبیر دی اور پی ایس ایل کے دو مکمل ایڈیشن متحدہ عرب امارات میں منعقد ہونے
پھر پاکستانی عوام کی خواہش کے پیش نظر میاں نواز شریف نے نجم سیٹھی کو پی ایس ایل پاکستان لانے کا ٹاسک دیا جو تیسرے ایڈیشن کے فائنل کو لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں فوج کے تعاون سے کامیابی کے ساتھ منعقد کروا کر وزیراعظم میاں نواز شریف کی جانب سے دئیے گئے ٹاسک کو پورا کر دیا ۔جس کے بعد چوتھے ایڈیشن کے دو سیمی فائنل لاہور اورفائنل کراچی میں کامیابی کےساتھ منعقد کئے گئے گزشتہ ایڈیشن کے سیمی فائنل اور فائنل کی کامیابی نے پانچویں ایڈیشن
کے مکمل طورپر پاکستان میں انعقاد ممکن ہو سکا۔
پی ایس ایل سیاست سے قطع نظر نجم سیٹھی کا بےبی تھا جس کی کامیابی میں جو محنت انھوں نے کی اس کا سارا ثمر اب پی سی بی حاصل کر رہا ہے ہمارے ملک میں یہ بڑی بد قسمتی ہے محنت کوئی اور کرتا ہے اس کا ثمر کو ئی اور حاصل کرتا ہے آج نجم سیٹھی کی محنت کاپھل۔پی۔ایس۔ایل۔کی شکل میں پاکستان کومل گیا،


لیکن تبدیلی حکومت جو کہ دوسروں کے منصوبوں پر اپنے نام کی تختیاں لگانے کا کام بڑی کامیابی کے ساتھ کرتی ہے پی ایس ایل کی کامیابی کا سارا کریڈٹ بھی اپنے نام کرتی نظر آتی ہے لیکن جھوٹ کی بنیاد پر قائم موجودہ حکومت اور انکے حواریوں میں اتنی اخلاقی جرات نہیں ہے کہ وہ پی ایس ایل کی کامیابی کا کریڈٹ جو اصل حقدار ہے اس کو دے ۔پی سی بی کو کرنا تویہ چاہیے تھا کہ نجم سیٹھی کو افتتاحی تقریب می مہمان خصوصی کے طور پر بلایا جاتا مگر یہ بد بخت سیاست کی وجہ سے ممکن نہیں ہو پایا ، قوم کو چاہیے کو پی ایس ایل جیسے کامیاب برانڈ کا تحفہ دینے والے محسن اور پاکستان میں عالمی کرکٹ کی بحالی کا راستہ ہموار کرنے والے نجم سیٹھی کو پی ایس ایل کی فائنل میں بطور مہمان خصوصی بنوا کر ہی دم لے جو قومیں اپنے محسنوں کو یاد نہیں رکھتی ،ان کو احترام نہیں دیتیں پھر تاریخ میں وہ اپنے نام و نشان برقرار نہیں رکھتی
شکریہ نجم سیٹھی، شکریہ نواز شریف شکریہ پاکستان

اپنا تبصرہ بھیجیں