ہاشم آملہ سے بہت کچھ سیکھنے کی کوشش کررہا ہوں، کامران اکمل

پاکستان کرکٹ ٹیم کے وکٹ کیپر، بیٹسمین اور پی ایس ایل ٹیم پشاور زلمی کے کھلاڑی کامران اکمل کہتے ہیں کہ وہ ہاشم آملہ سے بہت کچھ سیکھنے کی کوشش کررہے ہیں، ابھی جنوبی افریقی لیجنڈ کو آئے دو دن ہوئے ہیں لیکن انہوں نے بہت سی اہم ٹپس دی ہیں۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو میں کامران اکمل نے کہا کہ ڈریسنگ روم میں ہاشم آملہ جیسے لیجنڈ کی موجودگی سے نہ صرف نوجوانوں بلکہ سنیئر پلیئرز پر بھی بہت فرق پڑتا ہے، ان سے پہلے یونس خان تھے، مصباح الحق تھے، انہوں نے بھی کھلاڑیوں کو بہت گائید کیا۔

کامران اکمل نے کہا کہ پی ایس ایل جیسے ٹورنامنٹس کا یہ بڑا فائدہ ہوتا ہے کہ عظیم پلیئرز کے ساتھ ڈریسنگ روم شیئر کرنے کا موقع ملتا ہے، کامران اکمل نے کہا کہ وہ بھی ہاشم آملہ سے سیکھ رہے اور جب و وقت ملا ان سے بیٹنگ کی ٹپس لیتے ہیں۔

جب کامران اکمل سے پوچھا کہ انہوں نے اب تک ہاشم آملہ سے کیا کچھ سیکھا تو وکٹ کیپر بیٹسمین نے کہا کہ ہاشم آملا کا اسکل ورک اور بیٹنگ اسٹائل دیکھا ساتھ ساتھ جنوبی افریقی لیجنڈ نے یہ بتایا کہ نیا گیند کیسے کھیلنا ہے، ابتدائی چھ اوور کیسے گزارنے اور اننگز کیسے بنانی ہے۔

کامران اکمل کا کہنا تھا کہ نوجوان پلیئرز کو اعتماد دینا بہت ضروری ہوتا ہے، جس ڈریسنگ روم میں ہاشم آملہ جیسا پلیئر ہو اس میں نوجوانوں کو اور کیا چاہئے، وہ خود ہی سب کو چیزیں بتارہے ہوتے ہیں۔

پاکستان سپر لیگ کی تاریخ کے سب سے کامیاب بیٹسمین نے کہا کہ وہ انفرادی گولز نہیں دیکھتے بلکہ ہدف صرف یہی ہوتا ہے کہ اچھی پرفارمنس دیں اور پرفارمنس اچھی اس وقت ہی ہوتی ہے جب آپ ٹیم کا سوچتے ہیں، کولن انگرم کا ریکارڈ توڑنا یا کسی اور کا اسکور کرنا ہدف نہیں، ٹیم ک لیے دس رنز بنیں یا بیس لیکن جو بھی ہوں وہ ٹیم کے لیے مفید ہو۔

ایک سوال پر کامران اکمل کا کہنا تھا کہ ابھی وہ کم بیک کے بارے میں نہیں سوچ رہے، ابھی صرف پشاور زلمی کے لیے اچھا کرنے پر فوکس ہے۔ پی ایس ایل سے قبل میچ پریکٹس ملنا خوش آئند ہے، جو غلطیاں کی ان میچز میں اس سے سبق سیکھ کر ٹورنامنٹ میں اچھا کھلیں گے، کھلاڑی بے تاب ہیں پرفارم کرنے کے لیے، سب پلیئرز اس ٹورنامنٹ میں اچھا کرنے کے لیے پر امید ہیں اس لیے سب کے لیے یہ ٹورنامنٹ بہت اہم ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں