کیماڑی میں زہریلی گیس سے ہلاکتوں کی تحقیقات جاری ہے، حتمی رپورٹ آتے ہی میڈیا کے ذریعے عوام کو اعتماد میں لیں گے

 
کیماڑیمیں زہریلی گیس سے ہلاکتوں کی تحقیقات جاری ہے، حتمی رپورٹ آتے ہی میڈیا کے ذریعےعوام کو اعتماد میں لیں گے، وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ کی کمشنر کراچی افتخارشلوانی کے ہمراہ میڈیا کو بریفنگ
 
ایک ایکشہری کی جان قیمتی ہے، حتمی نتیجے کے بعد ذمے داران کے خلاف کارروائی کی جائیگی، سندھحکومت، پی ڈی ایم اے اور پاک فوج مل کر کام کررہے ہیں ، وزیر اطلاعات سید ناصر حسینشاہ
 
کراچی(18 فروری): وزیر اطلاعات و بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے آج کمشنر کراچی افتخارشالوانی کے ہمراہ کیماڑی میں زہریلی گیس سے ہلاکتوں کے واقعہ کے ھوالے سے میڈیا کوکمشنر آفس میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا ہے کہ کیماڑی واقعہ کی تحقیقات جاری ہے حتمی رپورٹآتے ہی میڈیا کے ذریعے عوام کو آگاہ کریں گے اور اعتماد میں لیا جائے گا۔ انھوں نےکہا کہ ہمارے لئے ایک ایک شخص کی جان انتہائی قیمتی ہے سیمپل کراچی یونیورسٹی کی لیبارٹریاور پی سی ایس آئی آر بھبور گئے ہیں۔ حتمی نتیجے اور تحقیقاتی حتمی رپورٹ کے بعدذمے داران کا تعین کیا جائے گا اور متعلقین کے کلاف کارروائی کی جائے گی۔ واقعہ کےفوری بعد سندھ حکومت کے تمام ادارے متحرک ہوگئے تھے جبکہ حکومت، پی ڈی ایم اے اور پاکفوج مل کر کام کررہے ہیں اور حادثہ کی وجوہات سامنے لانے کے لئے ہر ممکنا اقدامات کررہےہیں۔ کیماڑی میں زہریلی گیس سے دس ہلاکتیں ہوئیں جبکہ ڈھائی سو کے قریب افراد متاثرہوئے جن میں سے اکثریت کو طبی امداد کے بعد فارغ کردیا گیا اور گھروں کو روانہ ہوگئے۔محکمہ صحت نے حادثہ کے بعد تمام ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کی۔ اب بھی لوگوں کی امداداور رہنمائی کے لیے سندھ حکومت کے ادارے اور پاک نیوی موجود ہیں۔ وزیر اطلاعات نے کہاکہ آج کے اس جدید دور مین گیس خارج ہونے کی وجوہات کا پتہ لگ جانا چاہیے تھا۔ ایساو پیز اپنی جگہ موجود ہیں کل تک وزیراعلیٰ سندھ کے ہمراہ میں خود متاثرہ علاقے اوراسپتالوں کے دورہ پر تھا۔ انتہائی اہمیت کا حمل ہونے کے باعث کراچی پورٹ کی نقل و حملبہت زیادہ ہے۔ محترمہ شہید بینظیر بھٹو نے کیٹی بندر کا منصوبہ اسی وجہ سے دیا تھاکہ پورٹ آبادی کے بیچ میں نہ ہو۔ کیمیکل کی فیکٹریوں کو بھی شہر سے دور ہونا چاہیےیہ وقت سیاست کا نہیں بلکہ مل کر لوگوں کو ریلیف دینے کا ہے۔ اداروں میں مزید بہتریکی گنجائش ہے۔ یہ مسئلہ صرف ایک علااقے کا ہے دیگر علاقوں میں گیس پھیلنے کی افواہیںدرست نہیں۔ وزیراعلیٰ سندھ نے ضرورت کے تحت اعلاقہ خالی کرنے کی بات کی تھی تاہم ابایسی صورتحال نہیں ہے۔ کراچی پورٹ ٹرسٹ اپنا کام کررہا ہے۔ واقعہ کو سیاسی اشو نہیںبنانا چاہتے۔ کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے کہا کہ واقعہ صرف ایک مخصوص علاقے میںہوا ے اور لوکل سطح پر ہے۔ میڈیا سے درخواست ہے کہ وہ زہریلی گیس دیگر علاقوں میں پھیلنےکے حوالے سے افواہوں پر کان نہ دھرے۔ پوسٹ مارٹم کی رپورٹ آنے میں 72 گھنٹے لگتے ہیںحتمی رپورٹ آنے کے بعد وجوہات کا تعین کریں گے۔
ہینڈآؤٹ (ایم ایس ایس)
محمد شبیہ صدیقی
ڈپٹی ڈائریٹکٹر میڈیا مینجمنٹو تعلقات عامہ
صوبائی وزیر اطلاعاتو  بلدیات ، حکومت سندھ
رابطہ: 2294020-0300

اپنا تبصرہ بھیجیں