خاتون ویٹ لفٹر نے پاکستان کا نام روشن کردیا

پاکستان کی خاتون ویٹ لفٹر رابعہ شہزاد نے گلاسگو میں ملک کا نام روشن کردیا۔

رابعہ شہزاد نے گلاسگو میں ہونے والی گلاسگو اوپن کلاسک ویٹ لفٹنگ چیمپئین شپ 2020 میں پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے سونے کی شیلڈ اپنے نام کرلیا۔
عالمی سطح پر پاکستان کے لیے گولڈ میڈل جیتنے والی پاکستان کی پہلی خاتون ویٹ لفٹر رابعہ شہزاد نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر کامیابی حاصل کرنے کے بعد تصویر شیئر کی۔

رابعہ نے یہ بھی لکھا کہ ایک لڑکی ہوتے ہوئے انہوں نے اکیلے کراچی سے مانچسٹر اور مانچسٹر سے گلاسگو سفر کیا جہاں گولڈ شیلڈ لینے میں کامیاب رہیں۔

یاد رہے کہ رابعہ شہزاد اس سے قبل آسٹریلیا میں ہونے والی رالف کیش مین اوپن ویٹ لفٹنگ چیمپیئن شپ کی 55 کلوگرام کیٹیگری میں گولڈ میڈل جیت کر پاکستان کا نام روشن کر چکی ہیں۔

اس کے علاوہ وہ دبئی میں ہونے والی ایشین بینچ پریس چیمپیئن شپ میں بھی چاندی کا تمغہ اپنے نام کر چکی ہیں۔

رابعہ شہزاد کی بڑی بہنیں ماحور اور فریال قومی ویمن بیڈمنٹن چیمپئن رہ چکی ہیں جبکہ ان کے والد شہزاد احمد روئنگ کے قومی چیمپئن رہ چکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں