مارچ میں کوئی سیاسی حادثہ ہوسکتا ہے

وزیر ریلوے شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ مارچ میں کوئی سیاسی حادثہ ہوسکتا ہے، خطرہ صرف مولانا فضل الرحمان سے ہے، لیکن اس مرتبہ مولانا کو فری ہینڈ نہیں ملے گا، اسلام آباد کا رخ کرنے پر انہیں دھر لیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے مارچ میں ملکی سیاست میں کچھ گڑ بڑ ہونے کی خبروں پر ردعمل دیا ہے۔
نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر ریلوے نے معنی خیز گفتگو کی اور اس بات کے خدشے کا اظہار کیا کہ انہیں بھی یہی لگ رہا ہے کہ مارچ میں کوئی سیاسی حادثہ ہو سکتا ہے۔ وزیر ریلوے کا کہنا ہے کہ حکومت کو شہباز شریف یا پیپلز پارٹی سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔ شہباز شریف سڑکوں پر نہیں آ ئیں گے، انہیں اسلامی دوستوں کے ذریعے قابو کریں گے، ن لیگ اور پیپلز پارٹی صرف میڈیا میڈیا کھیلے گی۔وزیر ریلوے کا مزید کہنا ہے کہ تحریک اںصاف کی حکومت کو خطرہ صرف اور صرف مولانا فضل الرحمان سے ہے۔ تاہم اس مرتبہ مولانا فضل الرحمان کو کسی قسم کا فری ہینڈ نہیں ملے گا۔ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمان نے اب اسلام آباد آنے کی کوشش کی تو ان کی خیر نہیں ہوگی۔ اس مرتبہ مولانا نے دھرنا دینے کی کوشش کی تو وہ فوری دبوچ لیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمان ایک مرتبہ پھر حکومت گرانے کیلئے کوششیں کرنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔ مولانا کا کہنا ہے کہ عوام کو مہنگائی کے بوجھ سے نجات دلانے کیلئے ضروری ہے کہ موجودہ حکومت کا جلد سے جلد خاتمہ کیا جائے۔ تاہم مولانا نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ اس مرتبہ حکومت مخالف تحریک کیلئے اپوزیشن جماعتوں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن سے مدد نہیں مانگے گے۔
مولانا کا کہنا ہے کہ اس وقت ملک میں صرف ایک ہی حقیقی اپوزیشن رہ گئی ہے اور وہ ان کی جماعت ہے۔ جبکہ یہاں یہ بھی واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمان نے گزشتہ برس اکتوبر میں حکومت مخالفت دھرنا دیا تھا اور ہزاروں لوگوں کیساتھ اسلام آباد پہنچے تھے۔ تاہم کئی روز تک اسلام آباد میں بیٹھے رہنے کے باوجود مولانا اپنا ہدف حاصل کرنے میں ناکام رہے، اور پھر دھرنا ختم کر کے گھر چل دیے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں