شواہد سے ثابت ہوتا ہے کہ فیصل واوڈا الیکشن کے وقت دہری شہریت رکھتے تھے، فریقین کو 5 مارچ تک جواب جمع کرانے کا حکم

 سندھ ہائی کورٹ میں وفاقی وزیر فیصل واوڈا کی مبینہ دہری شہریت کا معاملہ،عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کردیئے۔فیصل واوڈا کی نااہلی کیلئے دائر درخواست کی سماعت سندھ ہائی کورٹ کے جسٹس محمد علی مظہر کی سربراہی میں دورکنی بنچ نے کی جہاں عدالت نے الیکشن کمیشن اور وفاقی وزیر فیصل واوڈا کو نوٹس جاری کرتے ہوئے فریقین کو 5 مارچ تک جواب جمع کرانے کا حکم دیا عدالت کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کو درخواست کیوں نہیں دی درخواست گزار کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کی آبزرویشن ہے الیکشن کمیشن ممبر کو نااہل قرار نہیں دے سکتا،عدالت کا کہنا تھا کہ اب تو فیصل واوڈا نے دوسری شہریت چھوڑدی تو آپ کیا چاہتے ہیں درخواست گزار نے بتایا کہ فیصل واوڈا نے الیکشن کے وقت دہری شہریت چھپائی،ریٹرننگ افسر نے دوسری شہریت ختم ہونے سے سات دن پہلے فیصلہ دے دیا،معاملہ عدالت میں آنے پر فیصل واوڈا نے خاموشی سے امریکی شہریت چھوڑنے کی درخواست دی،شواہد سے ثابت ہوتا ہے کہ فیصل واوڈا الیکشن کے وقت دہری شہریت رکھتے تھے،فیصل واوڈا کو نااہل قرار اور مراعات واپس کرنے کا حکم دیا جائے

اپنا تبصرہ بھیجیں