جے وی اوپل کیس: تسلی بخش جواب نہ دینے پر بلاول بھٹو کو 2 ہفتے کا وقت دے دیا گیا

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو قومی احتساب بیورو راولپنڈی کے دفتر میں پوچھے گئے سوالات کا تسلی بخش جواب نہ دے سکے، ذرائع کا کہنا ہے کہ بلاول بھٹو کی جانب سے تسلی بخش جواب نہ دینے پر انھیں 32 سوالوں پر مشتمل سوالنامہ دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق بلاول بھٹو کو سوالات کے جوابات جمع کرانے کے لیے 2 ہفتے کا وقت دیا گیا ہے۔ نیب نے بلاول بھٹو کو جے وی اوپل کیس میں طلب کیا تھا اور زرداری گروپ آف کمپنی کا 2008 سے 2019 تک کا تمام ریکارڈ ساتھ لانے کی ہدایت کی گئی تھی۔ نیب کی جانب سے کمپنی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی بھی فہرست مانگی گئی تھی۔

سینیٹرمصطفی نوازکھوکھر کا کہنا ہے کہ نیب کےہراساں کرنےکےباوجودبلاول قانون کی پاسداری کےخواہاں ہیں، مہنگائی کیخلاف احتجاج کےاعلان پرایک ہفتے میں نیب نےنوٹس بھیجا ، جب بھی بلاول بھٹوحکومت پرتنقیدکرتےہیں نیب نوٹس بھیج دیتاہے۔

ترجمان نے کہا کہ سپریم کورٹ پہلےہی کہہ چکی ہےکہ بلاول بھٹوبےقصورہیں، چیف جسٹس نےبھری عدالت میں بلاول بھٹو کو معصوم قراردیا، بلاول کومعصوم قراردینے کے باوجود نیب کانوٹس بھیجناسیاسی انتقام ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں