محکمہ صحت کے فزیوتھیراپسٹس کو ہیلتھ پروفیشنل الاؤنس دینے کی ہدایت، امید ہے کہ وہ اپنی استعداد کار میں مزید اضافہ لائیں گے : سید مراد علی شاہ

کراچی : وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے محکمہ صحت کے فزیوتھیراپسٹس کو ہیلتھ پروفیشنل الاؤنس دینے کی ہدایت کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ وہ اپنی استعدادکار میں مزید اضافہ لائیں گے اور سرکاری اسپتالوں میں زیادہ سے زیادہ وقت دیں گے۔ انہوں نے یہ فیصلہ آج وزیراعلی ہاؤس میں ہونے والی ایک اجلاس میں کیا۔ اجلاس میں چیف سکریٹری ممتاز شاہ ، پی ایس سی ایم ساجد جمال ابڑو، سیکرٹری صحت زاہد عباسی ، ایڈیشنل سیکرٹری خزانہ نثار شیخ اور دیگر نے شرکت کی۔ وزیر اعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ محکمہ صحت میں کام کرنے والے فزیوتھیراپسٹ کا ہیلتھ پروفیشنل الائونس (ایچ پی اے) اور سپیشل ہیلتھ کیئر الائونس (ایس ایچ سی اے) کا مطالبہ تھا۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ صوبائی حکومت پہلے ہی ہر ماہ میں تنخواہوں کی مد میں 43 ارب روپے ادا کررہی ہے۔ انہوں نے کہا تنخواہ کے بل میں اضافہ ہورہا ہے۔

لہذا ترقیاتی کام متاثر ہوتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب سرکاری ملازمین احتجاج کرنے سڑکوں پر آنے کا انتخاب کرتے ہیں تو وہ انکی کسی بھی درخواست پر غور نہیں کریں گے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے تفصیلی بحث اور غور کے بعد فزیوتھیراپیسٹس کو HPA اور HCA دینے پر اتفاق کیا اور کہا کہ وہ ان کی کارکردگی کا معائنہ کریں گے۔سیکرٹری صحت نے وزیر اعلیٰ سندھ کو بتایا کہ محکمہ صحت میں 48 فزیوتھیراپسٹ کام کرتے ہیں ، ان میں سے 22 گریڈ کے 16 ، 22 گریڈ کے17 ، 13 گریڈ 18 اور ایک گریڈ 19 میں شامل ہیں۔ گریڈ 16 کا15،000 روپے بطور HPA اور 5000 روپے SHCA وصول کرے گا۔ گریڈ 17 کا28472 روپےایچ پی اے اور 10000 روپے ایس ایچ سی اےوصول کرے گا۔ گریڈ 18 کا 19175 ایچ پی اے اور 10000 روپے ایس ایچ سی اے وصول کرے گا۔ گریڈ 19 کا 19000 ایچ پی اے اور 5000 روپے ایس ایچ سی وصول کرنے کے حقدار ہونگے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ کل رقم فی افسر 111،647 روپے ہوگی اور اس کا ماہانہ امپیکٹ 1،689،659 روپے ہوگا اور سالانہ مالی امپیکٹ 20،275،908 روپے ہوگا۔

اقرا اساتذہ کی مستقلی:
ایک اور سمری اقراء یونیورسٹی ٹیسٹ سے پاس اساتذہ کی زیر بحث آئی۔ وزیراعلیٰ سندھ نے سمری کابینہ کو بحث کے لئے بھیج دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں