پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پالیسی سطح کے مذاکرات آج سے شروع ہوں گے۔

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پالیسی سطح کے مذاکرات آج سے شروع ہوں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مذاکرات میں نئے ٹیکس عائد کرنے یا ٹیکس وصولیوں کا ہدف کم کرنے کا حتمی فیصلہ ہوگا۔

مذاکرات میں نیپرا اور اسٹیٹ بینک کو مزید خودمختاری دینے کے امور پر بھی بات چیت ہوگی۔

ذرائع کے مطابق پالیسی سطح کے مذاکرات میں مشیر خزانہ حفیظ شیخ پاکستانی ٹیم کی قیادت کریں گے جبکہ گورنر اسٹیٹ بینک اور سیکرٹری خزانہ وفد کا حصہ ہوں گے۔

مذاکرات میں مختلف شعبوں کو حاصل ٹیکس چھوٹ ختم کرنے اور بجلی و گیس کی قیمتوں میں اضافے کی تجاویز کا جائزہ لیا جائے گا جبکہ نقصان میں چلنے والے سرکاری اداروں کی بحالی یا نجکاری کا پلان آئی ایم ایف کو پیش کیا جائے گا۔

مذاکرات کی کامیابی کی صورت میں پاکستان کو 45 کروڑ ڈالر کی اگلی قسط جاری کی جائے گی۔

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات 13 فروری کو مکمل ہوں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں