اخبا را ت کو اشتہا را ت کی تقسیم کے طر یقہ کا ر کو مزید بہتر بنا یا جا ئےگا۔سید نا صر حسین شا ہ

اخبا را ت کو اشتہا را ت کی تقسیم کے طر یقہ کا ر کو مزید بہتر بنا یا جا ئےگا۔سید نا صر حسین شا ہ اشتہا را ت کے بقا یا جا ت شفا ف طریقے سے ادا کئے جا ئیں ،محکمہ اطلا عا ت کے ڈائریکٹرز کے اجلا س کی صدا ر ت کرا چی 6فروری ۔صو با ئی وزیر اطلا عا ت سندھ سید ناصر حسین شاہ کی زیر صدارت محکمہ اطلاعات کراچی میں تعینات ڈائریکٹرز کا اجلاس منعقد ہوا جس میں رخصت کے بعدآ نے والے سیکریٹری اطلاعات احمدبخش نا ریجو ، سیکریٹری محنت رشید سولنگی ، ڈائریکٹر جنرل منصور شیخ، ڈائریکٹر پریس انفارمیشن زینت جہاں، ڈائریکٹر ایڈمن و اکاو ¿نٹس سلیم خان ،ڈائریکٹر آر اینڈ آر ثنا ءاللہ را جڑ، اخترسوریو اور دیگر ڈائریکٹرز نے شرکت کی اور محکمہ کے مختلف شعبہ جا ت کے حوالے سے بریفنگ دی ۔اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ نے کہا کہ آپ سب میری ٹیم کا حصہ ہیں اور ہمیں مل کر محکمے کا کام کرنا ہے اور مسائل حل کرنے ہیں ہمارے سعید غنی صاحب جو سابقہ وزیر اطلا عا ت تھے انہو ں نے اس محکمہ کو بہت اچھے انداز میں چلایا ہے اسی بنیاد پر ان کو اب انہیں محکمہ تعلیم کا قلمدان سو نپا گیاہے ہماری کوشش ہوگی کہ ہم ان کے کئے گئے مثبت اقدامات کو آگے بڑ ھا ئیں اور کام میں تیزی لائیں۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اخبا را ت کو اشتہارات کی تقسیم کے طریقہ کار کو مزید بہتر بنایا جائے گا انہوں نے ہدایت دی کہ سندھ کے تما م صو با ئی محکمو ں میں فو کل پر سن مقرر کئے جا ئیں تا کہ حکومت تر قیا تی کا م اور غلط خبرو ں کی بر وقت تشہیر اور تر دید کی جا سکے ہر محکمہ کی 2015کی اشتہا ر کی پالیسی میں مزید بہتری لا ئی جا سکے ۔ اس مو قع پر انہیں بتا یا گیا کہ 74ا خبا را ت کی منسو خی کےلئے مختلف ڈپٹی کمشنر ز کہا گیا ہے ۔پریس کلب کو قا نو ن کے مطا بق گرانٹ دی جا ئے گی۔علا وہ ازیں اخبا را ت کو اشتہا را ت دیتے وقت میر ٹ کا خیا ل رکھا جا ئے گا ۔ انہو ں نے کہا کہ صوبائی کا بینہ کے فیصلو ں کی رو شنی میں گریڈ 1سے4گریڈ تک مقا می افرا د کی تقرری جلد از جلد کی جا ئے گریڈ5سے گریڈ 15 کی آسامیو ں کےلئے ٹیسٹ آ ئی بی اے سے کرا کر تقرری عمل میں لا ئی جا ئے ۔ انہو ں نے ہدایت دی کہ اخبارا ت کے بقا یا جا ت شفا ف طر یقے سے کلیئر کئے جا ئیں ۔اجلا س میںمختلف شعبہ جا ت کے ڈا ئریکٹر ز نے صو با ئی وزیر کو در پیش مسائل سے آگا ہ کیا جس پر صو با ئی وزیر نے کہا کہ افسرا ن کےلئے گا ڑ ی اور دفا تر کی کمی کو جلد پو را کیا جا ئے گا جبکہ تر قی کے منتظر افسران اور عملے کی بھی جلد از جلد تر قی کی جا ئے گی ۔ انہو ں نے محکمے کے افسرا ن کی پیشہوارا نہ تر بیت کی ضرورت پر زور دیتے ہو ئے کہا کہ اسکے لئے جلد لا ئحہ عمل تر تیب دیا جا ئے گا۔ آخر میں تما م ڈائریکٹر ز نے اجلا س کے انعقا د اور ان کے مسائل سننے پر صو با ئی وزیر سید نا صر حسین شاہ کا شکریہ ادا کیا اور انہو ں نے کہا کہ محکمہ اطلا عا ت کو بہتر بنا نے کےلئے ایسی میٹنگ وقتاََ فوقتاََ ہو گی تا کہ محکمہ اطلا عا ت کے مسائل کم ہو سکیں ۔ ہینڈ آﺅ ٹ نمبر 132۔۔۔۔ محکمہ اطلاعات حکومت سند ھ فون۔۔99204401 کراچی مور خہ6 0فروری 2020 کوآپریٹو ڈپارٹمنٹ کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے گا۔ جام اکرام اللہ دھاریجو کراچی 6 فروری۔ سندھ کے وزیر صنعت و تجارت ،محکمہ کوآپریٹو اور انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا ہے کہ اب وقت آگیا ہے کہ کوآپریٹو ڈیپارٹمنٹ کو جدید خطوط پر استوار کیا جائے اور لوگوں کو ترجیحی بنیادوں پر سہولت فراہم کی جائے۔ یہ بات انہوں نے جمعرات کو اپنے دفتر میں کوآپریٹو سوسائٹیوں کے معاملات کی سماعت کے دوران کہی۔اس موقع پر رجسٹرار کوآپریٹو سوسائٹی سہیل بلوچ اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کی کاوشوں کی وجہ سے کوآپریٹو سوسائٹیوں سے متعلق شکایات کی تعداد بتدریج کم ہورہی ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ لوگوں کو ہاو ¿سنگ سوسائٹیوں میں پلاٹ خریدنے سے قبل اس کی تصدیق کی جانی چاہئے کیونکہ جعلی دستاویزات پر پلاٹوں کی فروخت میں بعض مافیاز ملوث ہیں اور ان کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے ۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت اور کوآپریٹو محکمہ اور انسداد بدعنوانی جام اکرام اللہ دھاریجو نے مزید کہا کہ ہاو ¿سنگ سوسائٹیوں میں پلاٹوں کی ڈبلنگ سے متعلق تمام متنازعہ معاملات کو خالص میرٹ کی بنیاد پر نمٹایا جائے گا اور کسی کو بھی اس کے جائز حق سے محروم نہیں کیا جائے گا’۔ انہوں نے درخواست گزاروں کو یقین دلایا کہ انہیں انصاف فراہم کیا جائے گا اور ان کے حقوق کو کوئی نہیں چھینیں گے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے افسران کو ہدایت کی کہ وہ متعلقہ تمام معاملات کو مقررہ وقت میں حل کریں اور الاٹیز کے مسائل بروقت حل کریں۔ ہینڈ آﺅ ٹ نمبر 133۔۔۔ایم یو

محکمہ اطلاعات حکومت سند ھ فون۔۔99204401 کراچی مور خہ6 0فروری 2020   کراچی6فروری۔ وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی برائے انسانی حقوق ویرجی کوہلی نے ناظم آباد کے علاقے میں سنگدل باپ کی جانب سے بیٹی پر بدترین تشدد کرنے کے واقعہ کی میڈیا پر چلنے والی خبر پر نوٹس لیتے ہوئے محکمہ انسانی حقوق سندھ کے متعلقہ افسران کو ھدایت جاری کردی ہیں کے وہ متاثرہ لڑکی سے فوری ملاقات کریں اور اسے انصاف دلانے کے لیے ہر ممکن مدد فراہم کی جائے۔ سندھ میں کسی بھی شخص یا ادارے کو انسانی حقوق کی پامالی کی اجازت نہیں دیں گے۔ تشدد کرنے والے شخص کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے گی تا کہ آئندہ اس طرح کا واقعہ پیش نہ آ ئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ محکمہ انسانی حقوق سندھ کی فری ہیلپ لائن سروس -00011 0800عوام کو مدد اور سہولت فراہم کرنے کے لیے 24 گھنٹے کام کر رہی ہے۔ سندھ کے کسی بھی کونے میں اگر کسی شخص کے ساتھ ظلم اور زیادتی کا واقعہ پیش آئے تو عوام فوری طور پر انسانی حقوق کی ہیلپ لائن پر کال کر کی شکایات درج کریں محکمہ کے متعلقہ افسران اس شکایت پر ایکشن لیتے ہوے ہر ممکن مدد سہولت فراہم کریں گے۔ ہینڈ آﺅ ٹ نمبر 134۔۔۔اے کے

اپنا تبصرہ بھیجیں