ٹیکس نادہندہ گان کے خلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت کارروائی کی جائے گی۔ مکیش کمار چاؤلہ

ٹیکس نادہندہ گان کے خلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت کارروائی کی جائے گی۔ مکیش کمار چاؤلہ

کراچی۔ 6 فروری۔ صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ نے کہا ہے کہ محکمہ ایکسائز سندھ جائیداد اور پروفیشنل ٹیکس جمع نہ کروانے والوں کے خلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت کارروائی شروع کرے گا کیونکہ مذکورہ ٹیکسز جمع کروانے کی آخری تاریخ 31 جنوری گذر گئی ہے۔ یہ بات آج انہوں نے اپنے دفتر میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات عبد الحلیم شیخ، ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات شعیب احمد صدیقی اور دیگر افسران نے بھی شرکت کی. انہوں نے کہا کہ ٹیکس نادہندہ گان کی سہولت کے لئے جائیداد ٹیکس اور پروفیشنل ٹیکس جمع کروانے کی تاریخ میں توسیع بھی کی گئی تھی اور اب
جائیداد اور پروفیشنل ٹیکس جمع کروانے کی آخری تاریخ گزر جانے کے بعد ٹیکس نادہندہ گان کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔ صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ نے کہا کہ کارروائی کے دوران ٹیکس نادہندہ گان کی دکانیں اور کاروباری یونٹس سربمہر کئے جاسکتے ہیں اور یہ کارروائی لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت کی جائے گی۔ مکیش کمار چاؤلہ نے جائیداد ٹیکس اور پروفیشنل ٹیکس نادہندہ گان کو ہدایت کی ہے کہ وہ کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے بچنے کے لئے فوری طور پر ٹیکسز جمع کروا کر قانون پسند شہری ہونے کا ثبوت دیں۔ انہوں نے محکمہ ایکسائز کے متعلقہ افسران اور عملے کو بھی ہدایت دی کہ وہ ٹیکسز جمع کروانے والوں کے ساتھ مہذب رویہ اختیار کریں اور ٹیکسز جمع کروانے کے سلسلے میں ان کی بھرپور راہنمائی بھی کریں۔

کراچی۔ 6 فروری۔ صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ نے کہا ہے کہ محکمہ ایکسائز سندھ جائیداد اور پروفیشنل ٹیکس جمع نہ کروانے والوں کے خلاف لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت کارروائی شروع کرے گا کیونکہ مذکورہ ٹیکسز جمع کروانے کی آخری تاریخ 31 جنوری گذر گئی ہے۔ یہ بات آج انہوں نے اپنے دفتر میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات عبد الحلیم شیخ، ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات شعیب احمد صدیقی اور دیگر افسران نے بھی شرکت کی. انہوں نے کہا کہ ٹیکس نادہندہ گان کی سہولت کے لئے جائیداد ٹیکس اور پروفیشنل ٹیکس جمع کروانے کی تاریخ میں توسیع بھی کی گئی تھی اور اب
جائیداد اور پروفیشنل ٹیکس جمع کروانے کی آخری تاریخ گزر جانے کے بعد ٹیکس نادہندہ گان کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔ صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ نے کہا کہ کارروائی کے دوران ٹیکس نادہندہ گان کی دکانیں اور کاروباری یونٹس سربمہر کئے جاسکتے ہیں اور یہ کارروائی لینڈ ریونیو ایکٹ کے تحت کی جائے گی۔ مکیش کمار چاؤلہ نے جائیداد ٹیکس اور پروفیشنل ٹیکس نادہندہ گان کو ہدایت کی ہے کہ وہ کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے بچنے کے لئے فوری طور پر ٹیکسز جمع کروا کر قانون پسند شہری ہونے کا ثبوت دیں۔ انہوں نے محکمہ ایکسائز کے متعلقہ افسران اور عملے کو بھی ہدایت دی کہ وہ ٹیکسز جمع کروانے والوں کے ساتھ مہذب رویہ اختیار کریں اور ٹیکسز جمع کروانے کے سلسلے میں ان کی بھرپور راہنمائی بھی کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں