لیاری میں اربن فاریسٹ منصوبہ شروع کرنے پرخوش ہوں، جلد ملیر میں بھی اس قسم کے منصوبے کا آغاز کریئگے : بلاول بھٹو زرداری کا لیاری میں اربن فاریسٹ منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب

کراچی: پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا لیاری میں اربن فاریسٹ منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب،  لیاری میں اربن فاریسٹ منصوبہ شروع کرنے پرخوش ہوں، جلد ملیرمیں بھی اس قسم کے منصوبے کا آغازکریں گے، لیاری کے نوجوانوں کے مطالبات پورے کریں گے، نوجوانوں کوصحت افزا سرگرمیاں فراہم کرنے کے لیے اقدامات کریں گے ، لیاری کے نوجوان فٹ بال دیگرکھیلوں میں سب سے آگے ہیں ۔ سندھ حکومت نوجوانوں کوجوسہولیات فراہم کرےگی اس سے نوجوانوں کوفائدہ ہوگا ۔ سندھ حکومت لیاری کے نوجوانوں کواسپورٹس سہولیات فراہم کرے۔ لیاری میں امن وامان کی صورتحال بہت بہترہے۔ لیاری کے نوجوانوں کا مطالبہ ہے کہ ان کی سماجی سرگرمیاں بحال کی جائیں ۔ اربن فاریسٹ منصوبہ اس وقت کامیاب ہوگا جب لیاری کے لوگ اس کا ساتھ دیں گے ۔ اربن فاریسٹ کا منصوبہ کراچی کے عوام کا منصوبہ ہے ۔ لوگ درخت لگانے اوراس کی دیکھ بھال میں ہمارا ساتھ دیں۔ منصوبے کی تکمیل سے کراچی میں نئی تاریخ رقم ہوگی ۔ کم وسائل کے باوجود کراچی میں ترقیاتی منصوبے شروع کیے ہیں ۔ کراچی میں سڑکوں ، فلائی اووراورپانی کی فراہمی کے منصوبے شروع کیے ہیں ۔ سندھ حکومت نے پنجاب حکومت کے مقابلے میں زیادہ محنت کی ہے ۔ ہم سب ملکرسندھ حکومت کواس کا حصہ دلوائیں گے ۔ موجودہ حکومت سندھ کے عوام کے معاشی حقوق چھیننے کی کوشش کررہی ہے۔ این ایف سی سے سندھ کے 100 ارب روپے سے زائد وفاق نے روک لیے ۔ اگرسندھ کواین ایف سی سے پورے پیسے ملتے تو سندھ کے نوجوانوں کوروزگارمل سکتا تھا، جب سے کٹھ پتلی حکومت آئی ہے غریبوں سے ان کی چھت چھین لی گئی ہے ، غریبوں کوایک گھردینے کی بجائے حکومت نے ہزاروں گھرگرائے ہیں ، عوام کے معاشی قتل کے منصوبے لیکرحکمران برسراقتدارآئے ہیں ۔ موجودہ حکومت کے پہلے بجٹ کے موقع پرہی کہا تھا کہ یہ آئی ایم ایف کا بجٹ ہے ۔
ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی حکومت کی نااہلی کی وجہ سے ہے ۔ آئی ایم ایف کی شرائط کا نقصان حکومت بجلی گیس میں اضافے کی صورت میں اٹھارہے ہیں ، مطالبہ کرتا ہوں حکومت ائی آیم ایف کے ساتھ معاہدوں پرنظرثانی کرے ، آئی ایم ایف کا غریب دشمن پیکیج عوام کونامنظورہے ۔ ائی ایم ایف کے ساتھ پی ٹی آئی کے غریب دشمن پیکیج کے مسترد کرتے ہیں ۔ پیپلزپارٹی عوام دوست معاشی پالیسیاں متعارف کراتی ہے ، سابق وزیراعظم ذوالفقارعلی بھٹو نے روزگارکی فراہمی کے لیے اقدامات کیے ۔
بے نظیربھٹو نے روزگار اورمعاشی ترقی کے فلسفے پرعمل کیا گیا ۔ سابق صدرآصف علی زرداری کے دورمیں بھی عام آدمی کے معاشی حقوق کا تحفظ کیا گیا ۔ سرکاری ملازمین فوج کی تنخواہوں اورپینشن میں اضافہ کیا گیا
موجودہ حکومت ایک عوام دوست انقلابی پالیسی متعارف نہیں کرائی ہے ۔ عوام کوریلیف دینے کی بجائے بے نظیرانکم سپورٹ پروگرام کا نام تبدیل کردیا ۔ غریبوں سے چھتیں ،روزگارچھیننے والے بے نظیرانکم سپورٹ پروگرام سے شہید بی بی کی تصویرہٹانا چاہتے ہیں ۔ ہم عوام کی طاقت سے حکومت میں واپس آئیں گے ، 
مجھے عوام کی مدد اورحمایت چاہیئے ، پیپلزپارٹی حکومت میں آکرموجودہ حکومت کے چیھینی گئی تمام سہولیات واپس کرے گی ۔ غریب اورعوام دشمن حکمرانوں سے نجات کے لیے پیپلزپارٹی کی واپسی کی ضرورت ہے
بے نظیربھٹو کے فلسفے پرعمل کرکے لوگوں کے حقوق کے تحفظ کی ضرورت ہے ۔ ہم عوام کے حقوق کے لیے جدوجھد کریں گے غریب کی آوازبنیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں