سندھ میں زراعت اور معیشت کے شعبے کی ترقی کیلئے طلباء و طالبات تحقیق کے شعبے میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں : میر شبیر علی بجارانی

کراچی : سندھ کے وزیر برائے صحت عامہ،دیہی ترقی اور معدنیات و معدنی ترقی میر شبیر علی بجارانی نے کہا ھے کہ سندھ کی زراعت اور معیشت کی ترقی کے لئے طلباء و طالبات تحقیق کے شعبے میں بڑھ چڑھ کر اپنی اہلیت اور قابلیت کے جوہر دکھائیں تاکہ گلوبل وارمنگ کے سبب تیزی سے کم ھوتے آبی وسائل کو بچایا جاسکے اور کم سے کم پانی سے زیادہ سے زیادہ پیداوار حاصل کی جاسکے۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج مہران یونیورسٹی آف انجیئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی میں پاک امریکہ سینٹر فار ایڈوانس اسٹڈیز ان واٹر US Pakistan Centre For Advance Studies in Water کی تیسری گریجویشن تقریب سے خطاب کرتے ھوئے کیا۔
اس موقع پر اپنے خطاب میں میر شبیر علی بجارانی نے مہران انجیئرنگ یونیورسٹی کے وائس چانسلر اسلم عقیلی،یونیورسٹی کے واٹر سینٹر کے ڈائریکٹر بخشل لاشاری، یونیورسٹی آف اٹاہ Utah کے دائریکٹر برائے واٹر سینٹر اسٹیون برائن Steven Burian ،ہائر ایجوکیشن کمیشن کے نمائندوں،اساتذہ کرام اور
یو ایس ایڈ UDAID ٹیم کے نمائندوں کو مہران یونیورسٹی آف انجیئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے پانی کے شعبے میں جدید تعلیم کے مرکز کی تیسری گریجویشن تقریب کے انعقاد پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ پانی جیسی اھم ترین نعمت کو محفوظ کرنے اور اس کے موثر استعمال کے طریقوں کو بروئے کار لانے کے لئے تحقیق کا شعبہ وقت کی اھم ترین ضرورت ھے تاکہ ھم پانی جیسی نعمت کو محفوظ کرنے اور اسے بہتر سے بہتر انداز میں استعمال کرنے کے قابل ھوسکیں۔انہوں نے کہا کہ سندھ کی معیشت کا بہت بڑی حد تک انحصار زراعت پر ھے اور پانی زراعت کا لازمہ ھے ۔انہوں نے کہا کہ پانی کے استعمال کے لئے جدید انجینئرنگ اور سائنسی طریقوں پر تحقیق سے معیشت کو یقینی استحکام مل سکتا ھے اور حکومت اس شعبے میں تحقیق و تدبیر کرنے والے طالب علموں کی مکمل حوصلہ افزائی کرے گی۔ تقریب سے وائس چانسلر مہران انجیئرنگ یونیورسٹی اسلم عقیلی، یو ایس ایڈ کے نمائندوں اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں