سندھ سرکار کا بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کا نام بدلنے اور تصویر ہٹانے پر وفاق سے احتجاج کا فیصلہ

حکومت نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام بند اور تصویر ہٹانے یا نام بدلنے کی کوشش کی تو عوام بنی گالا کا گھیراؤ کریں گے, اسماعیل راہو
حکومت عوام کوگیس، بجلی، پیٹرول، آٹا اور چینی مہنگی کرنے کا ٹیکہ تو لگاتی رہی ہے، اب حوروں والا ٹیکہ لگوادے، اسماعیل راہو
کراچی :  سندھ سرکار نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کا نام بدلنے اور تصویر ہٹانے پر وفاق سے احتجاج کا فیصلہ کیا ہے. سندھ کے وزیر زراعت محمد اسماعیل راہو نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت نے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام بند اور تصویر ہٹانے یا نام بدلنے کی کوشش کی تو عوام بنی گالا کا گھیراؤ کریں گے, انہوں نے کہا کہ سلیکٹڈ حکومت بینظیرکے نام سے خائف ہے، پی پی دشمنی میں حکومت اتنی اندھی ہوگئی ہے کہ شہید وں کو بھی نہیں بخشا جارہا, صوبائی وزیر نے کہا کہ حکمران یاد رکھیں نام بدلنے یا تصویر ہٹانے سے لوگوں کے دلوں سے شہید بینظیر کو مٹایا نہیں جا سکتا. انہوں نے سوال اٹھایا کہ عمران خان بتائیں وہ شہید بی بی کی تصویراورنام سے خوفزدہ کیوں ہیں؟ جو حکمران خواتین سے نفرت کرتا ہو وہ کبھی بھی لیڈر نہیں بن سکتا، وزیراعظم انکم سپورٹ پروگرام کا نام بدلنے اور تصویر ہٹانے والی خبرون کی وضاحت دیں. اسماعیل راہو نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ اگر نام تبدیل کرنے یا پروگرام بند کرنے کی کوشش کی تو یہ عوام دشمنی ہوگا، جمہوریت پسند حلقے اس فیصلے کی ہرممکن مزاحمت کریں گے, چور دروازے سے آنے والے سابقہ عوامی حکومتوں کے پروگرام چوری کرکے اپنا چورن بیچ رہے ہیں. انہوں نے حکومت پر تنقید کے نشتر چلاتے ہوئے کہا کہ حکومت عوام کوگیس، بجلی، پیٹرول، آٹا اور چینی مہنگی کرنے کا ٹیکہ تو لگاتی رہی ہے، اب حوروں والا ٹیکہ لگوادے، موجودہ حکومت اپنے پاؤں پر کلہاڑی خود ماررہی ہے، اس فیصلے سے حکومت کو رسوائی کے سوا اور کچھ نصیب نہیں ہوگا, سال2020 حکومت کا آخری سال ہوگا

اپنا تبصرہ بھیجیں