رحمان ملک کا ترکی میں غیر قانونی پاکستانی تارکین وطن کی کشتی ڈوبنے کا نوٹس

رحمان ملک کا ترکی میں غیر قانونی پاکستانی تارکین وطن کی کشتی ڈوبنے کا نوٹسچیئرمین سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے ترکی میں غیر قانونی پاکستانی تارکین وطن کی کشتی ڈوبنے میں پاکستانیوں کی ہلاکت کا نوٹس لیتے ہوئے ترکی میں پاکستانی سفیر ، ڈی جی ایف آئی اے ، ڈی جی بیورو ایمگریشن سے واقعہ کی تفصیلات طلب کرلیں۔اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ ترکی کےمشرقی صوبہ میں کشتی کے ڈوبنے میں دو پاکستانی جاں بحق اور 11 شدید زخمی ہوئے ہیں،کشتی پر 71افراد سوار تھے جن میں 23پاکستانی ہیں جو پریشان کن ہے،وزارت خارجہ پھنسے ہوئے پاکستانیوں کی باحفاظت واپسی کا بندوبست کرے،غیر قانونی طور پر مختلف ممالک میں لیجانے والے ایجنٹوں کیخلاف سخت کاروائی کی جائے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ قائمہ کمیٹی داخلہ نے پچھلے اجلاس میں ملک بھر میں انسانی سمگلرز و ٹریفکرز کیخلاف سخت کاروائی کا حکم دیا،سینیٹر شیخ عتیق کی سربراہی میں ایف آئی اے، ایمگریشن بیورو و وزارت خارجہ پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی ہے،ایف آئی اے اور بیورو آف ایمگریشن ملک بھر میں غیر قانونی ایجنٹوں کیخلاف کریک ڈاؤن کرے،ایف آئی اے و ایمگریشن بیورو ملک بھر میں انسانی اسمگلرز کی تفصیلات کمیٹی کو جمع کرائے، پتہ لگایا جائےغیر قانونی طور پر مختلف ممالک میں لیجانے کیلئے ایجنٹس کن زمینی و سمندری راستوں اور نیٹ ورک کو استعمال کر رہے ہیں،ایجنٹس پاکستانیوں کو غیر قانونی طور پر مختلف ممالک لیجانے کیلئے کتنی رقم لے رہے ہیں۔