جدہ کی ڈائری

 امیر محمد خان

دنیا بھر میں کرسمس کا تہوار نہائت عقیدت اور احترام سے منایا گیا ۔ سعودی عرب کے شہر جدہ میں بھی کرسمس کی شاندار تقریب پاکستان قونصلیٹ جدہ میں منعقد ہوئی، اس موقع پر پاکستانی کرسچین جن میں بچے اور خواتین کی بڑی تعداد موجود تھی اپنی عبادت کی اور تحائف تقسیم کیئے ۔ تقریب کا اہتمام جدہ میں پاکستانی کرسچین کمیونٹی کی سرگرم تنظیم کرسچین ویلفیئر کمیونٹی نے کیا کرسچین ویلفیئر سوسائیٹی پرویز یوسف کی قیادت میں اپنی کمیونٹی میں نہ صرف سرگرم ہے ، بلکہ پرویز یوسف جدہ میں قائیم کشمیر کمیٹی اور پاکستان قومی یکجہتی کے ممبر بھی ہیں۔ آزادی کشمیر کے حوالے سے جدہ قونصیلٹ کی جانب سے تمام پروگرام میں بھی سرگرم ہوتے ہیں۔کرسمس کی تقریب کے مہمان خصوصی قونصل جنرل پاکستان خالد مجید اور انکی بیگم تھیں ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے قونصل جنرل نے کہا کہ کبھی بھی پاکستان نے اور وہاں بسنے والوں نے کرسچین کمیونٹی کو اقلیت تصور نہیں کیا پاکستان میں بسنے والے کرسچین پاکستان میں بسنے والی تمام عوام کے ساتھ برابری کے سطح پر تمام حقوق کے حق دار ہیں ۔

خالد مجید نے کہا کہ پاکستان میں بسنے والے کرسچین نے قائد اعظم محمد علی جناح کے ہمراہ تحریک پاکستان میں بھر پور حصہ لیا ہے اور پاکستان کی آزادی کے بعد بھی وہ قائد اعظم کے شانہ بشانہ رہے ، انہوں نے کہا کہ کرسچین کمیونٹی ایک پر امن کمیونٹی ہے جس سے پاکستان قونصیلٹ کو کبھی شکائت نہیں رہی وہ قانونکی بھر پور پاسداری کرتے ہیں۔ کرسچین کمیونٹی کے سرگر م رکن اور جوشیلے مقرر نے اپنی تقریر میں اہم نقطے اٹھائے ، انہوں نے کہا پاکستان ہمارا گھر ہے اور گھر کے لوگوںسے ہی شکوے کیے جاتے ہیں ، انہوں نے خاص طور پرذکر کیا کہ پاکستان کے قانون میں طلاق کا حق دیا گیا ہے جبکہ بائیبل میں طلاق کو منع کیاگیا ہے ۔ قران میںطلاق کا حق دیا گیا ہے ، ہمارا حکومت سے مطالبہ ہے کہ پاکستان کے کرسچین کیلئے قانون میں اجازت دی جائے کہ وہ بائیبل کے مطابق طلاق کے سلسلے میں اپنے مذہب کا اطلاق کرسکیں انہوں نے کہا کہ یہ بات افسوسناک ہے کہ پاکستانی کی عدالتوں نے اس بات پر غور نہیں کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پاسٹر پرویز یوسف نے اپنے خطاب میں، شاہ سلمان بن عبدالعزیز ، شہزادہ محمد بن سلمان اور سعودی حکومت ، کا شکریہ ادا کیا پرویز یوسف نے وزیر اعظم عمران خان ، افواج پاکستان کا شکریہ ادا کیا کہ انکی ولولہ انگیز قیادت میں تمام مذاہب کے افراد پر امن زندگی گزار رہے ہیں،

انہوں نے کہا نجی سطح پر شکایات ہوتی ہیں مگر خوشی ہے کہ حکومت انہیں حل کرتی ہے ۔ تقریب میں جدہ میں دیگر سرگرم فورمز کے ارا کین نے شرکت کی ، کرسمس کے موقع پر کرسچین کمیونٹی کو کیک کا تحفہ پاکستان یک جہتی فورم کی جانب سے بھیجا گیا ۔ دیگر مقررین میں ، جان گلزار ، پی ٹی آئی جدہ کے صدر قیصر جاوید، یک جہتی فورم کے کنونیر ریاض حسین بخاری، پاکستان جرنلسٹ فورم کے چیئرمین امیر محمد خان بھی شامل تھے ۔ تقریب کے آخر میٰں شرکاءکو عشائیہ دیا گیا ۔تقریب کو خوبصورت بنانے کیلئے کمیونٹی کے اراکین ندیم، نعمان ، شکیل، عرفان اور فرانسس میں سرگرمی سے حصہ لیا ۔

ریاض میں تخیل ادبی فورم کا عالیشان مشاعرہ

 تخیل ادبی فورم کے زیر اہتمام سفارت خان پاکستان ریاض، رواں سال کی الوادعی ادبی تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ سفیرِ راجہ علی اعجازصاحب مہمانِ خصوصی تھے ۔ شوکت جمال، جناب عقیل قریشی اور سعید اشعر مہمانِ اعزازی تھے ۔ تقریب کی صدارت جناب محسن رضا سمر اور نظامت کے فرائض یوسف علی یوسف اور راشد محمود نے ادا کئے۔ مشاعرہ کے آغاز میں تخیل ادبی فورم کے سر پرست اعلی منصور محبوب نے تخیل ادبی فورم کا سپاس نامہ پڑھ کر سنایا۔

روک سکتا ہی نہیں میری تخیل کی اڑان
شور کتنا بھی کرے حلقہ کسی زنجیر کا

تقریب کا پہلا حصہ مقبوضہ کشمیر میں موجود مسلمانوں پہ طاری ظلم و ستم کے ذکر پہ مختص تھا۔ تخیل ادبی فورم کے ڈپٹی جنرل سیکرٹری راشد محمود نے مقبوضہ کشمیر پہ ڈھائے جانے والے بھارتی مظالم کا تفصیلی ذکر کیا۔ شاہد خیالوی اور صدف فریدی نے کشمیر پہ اپنی نظمیں سنا کر سامعین کے جذبات اجاگر کئے۔ تقریب کا دوسرا حصہ روایتی مشاعرے پہ مشتمل تھا، مقامی اور منطقہ شرقیہ سے آئے شعرائ، افتخار ساحل، شہباز صادق، فیصل اکرم، پیر اسد کمال، فیاض بھٹی، آر ایم اقبال، رانا سبحان، کامران ملک، صابر امانی، شاہد خیالوی، منصور محبوب، صدف فریدی، یوسف علی یوسف، سعید اشعر، شوکت جمال اور محسن رضا سمر نے اپنا تازہ کلام سنا کر سامعین سے خوب داد وصول کی۔ مشاعرے میں خواتین کی بڑی تعداد موجود تھی۔

تقریب کے دوران مہمانِ خصوصی راجہ علی اعجاز نے تخیل ادبی مجلے کے پہلے شمارے کی رونمائی کی اور عقیل قریشی کو ان کی سعودی عرب میں قیام کی دوران ادبی اور ثقافتی خدمات پہ انھیں تخیل ادبی و ثقافتی ایوارڈ پیش کیا۔ تخیل ادبی فورم کے پیٹرن ان چیف منصور محبوب نے سفیر پاکستان کو ان کی کیمیونٹی کے لیے سفارتی خدمات پہ تخیل سماجی ایوارڈ پیش کیا، مزید براں تخیل ادبی فورم کے تمام میڈیا پارٹنر یونائٹڈ میڈیا فورم، پاک یونائیٹد میڈیا فورم اور پاکستان جرنلسٹ فورم اور سفارت خانہ کے عملے کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا۔
تقریب کی آخر میں سفیرِ پاکستان راجہ علی اعجاز صاحب نے اظہار خیال کرتے ہوئے تخیل ادبی فورم کے تمام انتظامیہ کا بھرپور شکریہ ادا کیا اور مسئلہ کشمیر پہ بات کو پروگرام کا حصہ بنانے پہ خراج تحسین پیش کیا۔