پاکستان کوسٹ گارڈزکی اسمگلنگ کے خلاف مختلف کاروائیاں

پاکستان کوسٹ گارڈزکو خفیہ ذرائع سے اطلاع ملی کہ وندر (بلوچستان) سے بھاری مقدار میں منشیات اسمگل ہونے کا خدشہ ہے۔ پاکستان کوسٹ گارڈز کے خفیہ ذرائع کی نشا ندہی کے مطابق پاکستان کوسٹ گارڈز کے علاقہ کمانڈرنے جوانوں کے ہمراہ موبائل گشت پارٹیاں ترتیب دیں اور مشکوک مقامات کی نگرانی شروع کر دی گئی۔ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران مختلف جگہوں میں کی گئی کاروایؤں کی تفصیل درج ذیل ہے۔ 1۔ وندر(بلوچستان) کے قریب واقع ناکہ کھاری چیک پوسٹ پر کوئٹہ سے کراچی آنے والی کوچ کی تلاشی کے دوران خفیہ طریقے سے چھپائی گئی 154 کلو گرام اعلی کوالٹی کی چرس برآمدکر تے ہوئے02افراد کو گر فتار کر لیا گیا اور غیر قانونی طریقے سے اسمگلنگ کی جانے والی اشیاء میں غیر ملکی کپڑا،انڈین گٹکا، ایرانی کارپٹ، گاڑیوں کے بیرنگ، ٹائر،رم، انجن ہیڈ، ونڈواے سی اورایک گاڑی کا انجن ضبط کر لیاگیا۔

 وندر شہر او ر اورماڑہ بسول ندی میں کاروائی کرتے ہو ئے 704بوتلیں غیرملکی شراب برآمد کر لی گئی۔  ناکہ کھاری چیک پوسٹ (وندر بلوچستان) پرمختلف گاڑیوں سے 2,200لٹیر ایرانی ڈیزل اور 2,000لٹیر انجن ائل(ایرانی) برآمدکر لیا گیا۔ ناکہ کھاری، سپرہائی وے اور ٹھٹہ برج سے دوران چیکنگ 31,977کلو گرام چھالیہ اور562 کاٹن ایر انی کراکر ی برآمد کرتے ہوئے کنٹینر کو ضبط کر لیا گیااور ایک مسافر کوچ سے 311کلو گرام غیر ملکی کپڑا اور 94پیکٹ انڈین گٹکا برآمد کرتے ہوئے 02افراد کو گرفتار کر لیاگیا۔ 5۔ گوادر، شاہ جہان چیک پوسٹ پر کارروائی کرتے ہوئے کوچ سے 103اسٹیک غیر ملکی سگریٹ برآمد کر لیے گئے۔ تمام اسمگل کی جانے والی منشیات ،شراب، چھالیہ اور متفرق اشیاء کو پاکستان کوسٹ گارڈز نے اپنی تحویل میں لے کر مزید قانونی کارروائی جا رہی ہے۔ جبکہ04گرفتار شدہ افراد سے مزید تفتیش جاری ہے۔ پکڑی جانے والی منشیات،شراب اور متفرق اشیاء کی عالمی مارکیٹ میں مالیت تقریباً -/383.34ملین روپے کے لگ بھگ ہے۔ پاکستان کوسٹ گارڈز اس امر کا اعادہ کرتی ہے کہ مستقبل میں بھی اس طرح کی کاروائیاں تسلسل کے ساتھ جاری رہیں گی تا کہ وطنِ عزیز کو اس لعنت سے نجات دلائی جا سکے اور اس مقصد کے حصول کے لئے تمام دستیاب وسائل کو بھرپور طریقے سے بروئے کار لایا جائے گا۔