پی پی (ن) خود احتسابی کی مشق کریں انہیں اپنی سیاست کے سکڑنے کی وجوہات معلوم ہو جائینگی : ہمایوں اختر خان

2020عام انتخابات نہیں بلکہ پاکستان کی ترقی کی رفتار مزید تیز ہونے کا سال ہے’سینئر مرکزی رہنما سے وفد کی ملاقات
لاہور  : پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خا ن نے کہاہے کہ پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ احتساب کے عمل کی مخالفت کی بجائے خود احتسابی کی مشق کریں انہیں اپنی سیاست کے سکڑنے کی اصل وجوہات معلوم ہو جائیں گی ،بلاول زرداری کارکنوں کو اپنے ساتھ رکھنے کیلئے ضرور للکارے ماریں لیکن قومی اداروں کو سیاست میں نہ گھسیٹیں،2020عام انتخابات نہیں بلکہ پاکستان کی ترقی کی رفتار مزید تیز ہونے کا سال ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پارٹی دفتر میں پارٹی کے مرکزی رہنماؤں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ ہمایوں اخترخان نے کہا کہ اس وقت سیاسی یتیم کون ہیں پوری قوم آگاہ ہے اور درخواستیں کی جارہی ہیں ان پر ترس کھایا جائے۔ پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ نے اپنی سیاست کی آبیاری کیلئے ملک کی جڑیں کھوکھلی کر دی ہیں ۔

عوام کے نا م پر ملک میں لوٹ مار کا بازار گرم رکھا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان خارجہ محاذ پر بھی بہترین حکمت عملی سے چل رہے ہیں اور کوئی بھی ملک پاکستان سے ناراض نہیں ۔پاکستان معاشی چیلنجز سے نبرد آزما ہے ،اب بیگاڑ کو سدھار میں تبدیل کیا جارہا ہے اور پاکستان کے بد خواہوں کو سوائے مایوسی کے کچھ نہیں ملے گا۔انہوں نے کہا کہ  2020ء عام انتخابات نہیں بلکہ پاکستان کی ترقی کی رفتار مزید تیز ہونے کا سال ہے اور اپوزیشن نئے سال میں بھی اپنی دم توڑتی سیاست کا ماتم کرتی ہوئی نظر آئے گی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تمام معاملات کو بہترین طریقے سے سلجھانے کی اہلیت رکھتی ہے اور انشا اللہ پاکستان مزید مضبوط ہوگا ۔ وہ وقت دور نہیں جب پاکستان ٹیک آف کی پوزیشن میں آ ئے گا اور دنیا کی کوئی طاقت پاکستان کو اونچی پرواز سے نہیں روک سکے گی ۔ انہوں نے کہا کہ قومی احتساب بیورو حکومت کے ماتحت نہیں بلکہ خود مختار ادارہ ہے اور اس کے معاملات عدالتوں میں طے ہوتے ہیں۔ حکومت کا کسی گرفتاری سے کوئی تعلق نہیں بلکہ جس نے بھی ملک و قوم کی دولت لوٹی ہے اسے جوابدہ ہوناچاہیے ۔