پنجاب فوڈ اتھارٹی کی صوبہ بھر میں ناشتہ پوائنٹس کی چیکنگ  : مختلف شہروں میں 350 ناشتہ پوائنٹس کا معائنہ، 2سیل، 59 کو جرمانے،350 پوائنٹس کو اصلاحی نوٹس جاری

100لیٹر استعمال شدہ آئل،2من ناقص دہی،60لیٹر لسی،50کلو زائدالمیعاد گوشت، 500باسی سموسے برآمد
خراب آٹا، باسی سالن اور پیکنگ کے لیے ردی کا استعمال بھی کیا جا رہا تھا۔عرفان میمن
مستقل بنیادوں پر بہتر معیار کو قائم رکھنے کے لیے ناشتہ پوائنٹس کی سرپرائز چیکنگ کی جاتی ہے۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی
لاہور24دسمبر:ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی عرفان نوازمیمن کی ہدایت پر صوبہ بھر میں ناشتہ پوائنٹس کی چیکنگ کی گئی۔ناقص اور غیر معیاری اشیاء کے استعمال پر 2سیل جبکہ متعدد کو جرمانے عائد کیے گئے۔بھاری مقدار میں مضر صحت اشیاء تلف جبکہ متعدد کو اصلاحی نوٹسز بھی جاری کیے گئے۔تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی کی فوڈ سیفٹی ٹیموں نے مختلف شہروں میں 350 ناشتہ پوائنٹس کا معائنہ کرتے ہوئے ناقص اجزاء کے استعمال پر 2فوڈ پوائنٹس کوسیل کردیا۔ لاہورزون میں 111، راولپنڈی 126، ملتان میں 83 اورمظفر گڑھ میں 30 ناشتہ پوائنٹس کو چیک کیا گیا۔فوڈ سیفٹی ٹیموں نے حفظانِ صحت کے اصولوں کی خلاف ورزیوں اور غیر معیاری انتظامات پر 59کو جرمانے عائد کیے گئے۔ مزید برآں معمولی نقائص پر 350 پوائنٹس کو اصلاحی نوٹس اور تفصیلی ہدایت نامے جاری کیے گئے۔

کارروائیوں کے دوران 100لیٹر استعمال شدہ آئل،2من ناقص دہی،60لیٹر لسی،50کلو زائدالمیعاد گوشت، 500باسی سموسے،  اورکھلے رنگ برآمد کیے گئے۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ ناقص گھی اور مصالحہ جات کے استعمال پر ناشتہ پوائنٹس کو سیل کیا گیا۔ خراب آٹا، باسی سالن اور پیکنگ کے لیے ردی کا استعمال بھی کیا جا رہا تھا۔ پلاسٹک کے گندے برتنوں کی موجودگی اور نیلے کیمیکل ڈرموں میں پینے والا پانی رکھا پایا گیا۔ ورکرز کی ذاتی صفائی نہ ہونے اور فوڈ سیفٹی کٹس کے عدم استعمال پر بھی کاروائیاں عمل میں لائی گئیں۔عرفان میمن کامزید کہنا تھا کہ ناشتہ پوائنٹس کی مجموعی صورت حال میں بہتری آنا خوش آئند ہے۔انہوں نے واضح کیا کہ مستقل بنیادوں پر بہتر معیار کو قائم رکھنے کے لیے ناشتہ پوائنٹس کی سرپرائز چیکنگ کی جاتی ہے۔