دنیائے کرکٹ کو دیوار سے لگانے کا ایک اور بھارتی منصوبہ سامنے آگیا

بگ تھری سسٹم کے خاتمے کے بعد بھارت ایک مرتبہ پھر مستقبل میں دنیائے کرکٹ پر حکمرانی اور آئی سی سی کے دیگر رکن ممالک کو دیوار سے لگانے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔

کرک انفو کی رپورٹ کے مطابق اس منصوبہ بندی کے حوالے سے بھارتی کرکٹ بورڈ بی سی سی آئی کے سربراہ سارو گنگولی نے خود اپنے ایک انٹرویو میں بتادیا
کلکتہ کے ایک مقامی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے سارو گنگولی کا کہنا تھا کہ بھارت ہر سال 4 ٹیموں پر مشتمل ایک سپر سیریز منعقد کرے گا۔

انہوں نے بتایا کہ ان ٹیموں میں بھارت کے ساتھ آسٹریلیا اور انگلینڈ شامل ہیں جبکہ اس میں رینکنگ کی ایک صف اول کی ٹیم بھی شامل ہوگی۔

سارو گنگولی کا کہنا تھا کہ 2021 سے سیریز کا انعقاد ہر سال ہوگا جبکہ پہلی سپر سیریز بھارت میں ہی کھیلی جائے گی، جبکہ یکے بعد دیگر بھارت، آسٹریلیا اور انگلینڈ ہی اس سیریز کی نمائندگی کریں گے۔

واضح رہے کہ یہ تینوں ممالک ہی عالمی کرکٹ میں بگ تھری بنانے میں کامیاب ہوئے تھے جس کی وجہ سے انہیں کرکٹ کی آمدن کا زیادہ حصہ ملتا تھا۔

کرک انفو کے مطابق عالمی کرکٹ میں اس نئی چار فریقی سیریز کو شامل کرنے کے لیے بی سی سی آئی اور کرکٹ آسٹریلیا کے درمیان بات چیت جاری ہے۔

آئندہ برس جنوری میں بی سی سی آئی صدر سارو گنگولی کی کرکٹ آسٹریلیا کے چیئرمین ارل اینڈنگز اور چیف ایگزیکٹو کیون رابرٹس کے درمیان ملاقات متوقع ہے جس میں اسی معاملے پر بات چیت کی جائے گی۔

اس حوالے سے کرکٹ آسٹریلیا نے کوئی بھی تبصرہ کرنے سے گریز کیا ہے تاہم ماضی قریب میں کرکٹ آسٹریلیا کے چیئرمین ایک مرتبہ پھر بگ تھری یا اس جیسے معمولات کا حصہ بننے میں ہچکچاہٹ دکھا چکے ہیں۔

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا تھا کہ میرا نہیں خیال کہ اس سے عالمی کرکٹ کو کوئی فائدہ ہوگا، اس وقت توازن برقرار ہے اور بڑے کرکٹ بورڈ ہونے کی حیثیت سے ہمیں توازن برقرار رکھنا چاہیے۔

خیال کیا جارہا ہے کہ اس سیریز کے انعقاد سے بھارت، آسٹریلیا اور انگلینڈ کے کرکٹ بورڈز کی آمدن میں اضافہ ہوجائے گا جبکہ عالمی سطح پر دو طرفہ کرکٹ کم ہونے کے بھی خدشات ہیں۔