خواتین نے ہر شعبہ زندگی میں بھرپور جدوجہد سے اعلیٰ مقام حاصل کیا ہے : صوبائی وزیر اقلیتی امور و خوراک ہری رام کشوری لال

سندھ حکومت خواتین مزید با اختیا ر بنا نے کےلئے بھر پو ر اقدا ما ت کر رہی ہے۔
ہر ی را م کشوری لا ل کا نیشنل ورکنگ وومن ڈے کے مو قع پر سیمینا ر سے خطا ب
کرا چی 23دسمبر ۔صوبائی وزیر اقلیتی امور و خوراک ہری رام کشوری لال نے کہا ہے کہ حکومت سندھ کی بھرپور کوشش ہے کہ خواتین کے خلاف امتیازی سلوک کو ختم کرکے انہیں مزید بااختیار بنایا جائے تاکہ خواتین کی ترقی کی راہ میں موجود ہر رکاوٹ کو ختم کیا جائے اور خواتین بلا خوف وخطر ملک کی ترقی کے لئے مردوں کے شانہ بشانہ کام کریں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج ایک مقامی ہوٹل میں صوبائی محتسب سندھ برا ئے ©” ملازمت کی جگہ پر خواتین کو ہراساں کیے جانے کے خلاف تحفظ کا ادارہ” کے زیر اہتمام نیشنل ورکنگ وومن ڈے کے موقع پر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ آج پاکستانی خواتین ان شعبوں میں بھی اپنی خدمات انجام دے رہی ہیں جہاں پہلے ان کا کام کرنا ناممکن سمجھا جاتا تھا۔سیاست ،صحافت، دفاع اور دیگر شعبو ں یہاں تک کہ کھیلوں میں بھی پاکستانی خواتین بین الاقوامی سطح پر حصہ لے رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس بات سے کسی بھی طرح انکار نہیں کیا جاسکتا کہ آج ہماری خواتین جس مقام پر کھڑی ہیں اس کو حاصل کرنے کے لیے انہوں نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔یہ مقام ان کو سخت جدوجہد اور اپنی قابلیت منوا کے حاصل ہوا ہے۔اس کی سب سے بہترین مثال ہماری سابق وزیر اعظم شہید محترمہ بے نظیر بھٹو ہیں۔

انہو ں نے اپنے ادوا ر میں خوا تین کو با اختیا ر بنا نے کےلئے وومن پو لیس اسٹیشن ،فر سٹ وومن بنک ، محکمہ تر قی نسواں کے قیا م سمیت خواتین کی بھر پو ر حو صلہ افزا ئی کی تا کہ وہ فیصلہ سا زی کے عمل میں شا مل ہو سکیں ۔ انہوں نے کہا کہ آئین پاکستان ملازمت پیشہ خواتین کو تحفظ فراہم کرتا ہے اسی لیے صوبائی سطح پر بھی حکومت سندھ میں ملازمت پیشہ خواتین کے لیے بہت سے اقدامات اٹھائے ہیں اور انکے باعزت طور پر روزگار کمانے کے لیے پالیسی بنائی ہے تا کہ وہ کسی امتیازی سلوک کا شکار نہ ہوں۔صو با ئی وزیر نے کہا کہ قا نو ن سا زی ہو جا تی ہے لیکن اگر اس پر عملدرآمد نہ ہو تو ہما ر ی کا وشیں ضائع ہو جا تی ہیں ۔سیمینا ر سے صوبائی محتسب سندھ © برا ئے” ملازمت کی جگہ پر خواتین کو ہراساں کیے جانے کے خلاف تحفظ کا ادارہ” جسٹس (ر ) شا ہ نوا ز طا ر ق ،چیئر پر سن برا ئے سندھ کمیشن آن اسٹیٹس آف وومن نزہت شیریں ،ڈاکٹر ہما ءبقا ئی ،ما ر وی اعوا ن و دیگر نے خطا ب کیا ۔