بھارتی فوج کی جانب سے آزاد کشمیر کی شہری آبادی کو شدید شیلنگ کے ذریعے نشانہ بنایا گیا

) بھارت کی جانب سے وادی نیلم کی شہری آبادی پر حملہ، دہشت گرد بھارتی فوج کی جانب سے آزاد کشمیر کی شہری آبادی کو شدید شیلنگ کے ذریعے نشانہ بنایا گیا، پاک فوج کی جانب سے بھی بھرپور جواب۔ تفصیلات کے مطابق اطلاعات موصول ہو رہی ہیں کہ بھارت نے دنیا کی توجہ اپنے اندرونی مسائل سے ہٹانے کیلئے آزاد کشمیر کی شہری آبادی کو نشانہ بنانا شروع کر دیا ہے۔
اطلاعات کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے آزاد کشمیر کی وادی نیلم میں شہری آبادی پر شدید شیلنگ کی گئی ہے۔ بھارتی فوج کی شدید شیلنگ کے باعث کئی مکانات اور شہری نشانہ بنے ہیں۔ جبکہ بھارتی فوج کی اس دہشت گردی کے بعد پاک فوج کی جانب سے بھی منہ توڑ جواب دیا گیا۔ پاک فوج کی جوابی کاروائی کے بعد بھارتی فوج کی توپیں خاموش ہوگئیں۔
اس حوالے سے مزید معلومات اور تصدیق کیے جانے کا انتظار کیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب معروف دفاعی تجزیہ کار زید حامد کی جانب سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری ایک پیغام میں تہلکہ خیز دعویٰ کیا گیا ہے

زید حامد کا کہنا ہے کہ بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر اشتعال انگیز کاروائیاں کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ جبکہ اس مرتبہ بھارت نے لائن آف کنٹرول پر سپائس میزائلوں کا استعمال بھی کیا ہے۔
زید حامد کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے سپائس 2000 میزائلوں سے پاکستانی فوج کے مضبوط مورچوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔ جبکہ بھارت نے اسرائیل سے اسی طرز کے مزید جدید میزائل بھی حاصل کر لیے ہیں۔ جبکہ واضح رہے کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی اس حوالے سے 2 روز قبل جاری بیان میں خدشے کا اظہار کیا تھا۔ وزیر خارجہ نے پہلے ہی بتا دیا تھا کہ بھارت نے سرحد پر اپنے مورچوں میں میزائل نصب کر لیے ہیں۔ بھارت اپنے میزائلوں کے ذریعے آزاد کشمیر کے شہری علاقوں کا نشانہ بنانا چاہتا ہے۔ اب بظاہر وزیر خارجہ کے خدشات درست ثابت ہوئے ہیں۔ تاہم اس تمام معاملے کے حوالے سے عسکری حکام یا ذرائع کی جانب سے تاحال تصدیق یا تردید نہیں کی گئی