بھارت ہندو راشٹریا اور ہندو توا بالا دستی کے فسطائی نظریے کی جانب بڑھ رہا ہے

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ “اپنا منہ بند رکھیں مودی کے مددگار مت بنیں! ہندوستان کو اندرونی طور پہ اپنا مسئلہ ڈیل کرنے دیں- پاکستان کی چھاپ نہ لگائیں

احسن اقبال نے بھارت میں جاری تحریک کو بھارت کا اندرونی مسئلہ قرار دے دیا ہے۔ خیال رہے کہ بھارت میں اس وقت سیٹیزن بل کے خلاف تحریک چل رہی ہے اور بھارت میں جلاؤ گھیراؤ اور ہنگمے جارے ہیں اس حوالے سے گزشتہ روز بھارت میں شہریت کے متنازع قانون کا حوالہ دیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ “گزشتہ پانچ برس سے بھارت ہندو راشٹریا اور ہندو توا بالا دستی کے فسطائی نظریے کی جانب بڑھ رہا ہے، بھارت میں بڑی تحریک کا آغاز ہو چکا ہے اور اجتماعیت پر یقین رکھنے والے بھارتی سراپا احتجاج ہیں۔
” وزیراعظم عمرا ن خان نے کہا ہے کہ بھارت میں احتجاج سے پاکستان کیلئے خطرہ بڑھ رہا ہے، بھارت میں احتجاج ایک بڑی تحریک بن چکا ہے، بھارت میں ہندوتوا اور فاشسٹ نظریات کا غلبہ ہوتا جا رہا ہے، مقبوضہ کشمیر میں محاصرہ ختم ہونے پر خون ریزی کا خدشہ ہے۔

انہوں نے ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ بھارت 5 سال میں بھارت بالادستی کے نظریے کے تحت ہندو ریاست کی طرف بڑھا۔

بھارت میں ہندوتوا اور فاشسٹ نظریات کا غلبہ ہوتا جا رہا ہے۔ اس دوران مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کا محاصرہ جاری ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں محاصرہ ختم ہونے پر خون ریزی کا خدشہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہریت کے قانون کو لے کربھارت میں لوگ احتجاج کررہے ہیں۔ بھارت میں احتجاج اب ایک بڑی تحریک بن چکا ہے